قوم اور ملک کے مستقبل سے کھیلنے کے بجائے حکومت استعفیٰ دے‘ شہباز شریف

لاہور:مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے کہا ہے کہ اس ماہ میں تجارتی خسارہ ریکارڈ5 ارب ڈالرسے زیادہ ہونا معاشی تباہی کی علامت ہے،موجودہ مالی سال کے پہلے پانچ ماہ میں تجارتی خسارہ ریکارڈ 20 ارب 648 ملین ڈالر ہو چکا ہے،تجارتی خسارے میں ریکارڈ اضافہ ملکی درآمدات اوربرآمدات میں عدم توازن کا واضح ثبوت ہے۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ تازہ اعدادوشمار بتارہے ہیں کہ ملک میں ڈالر کی آمد میں کمی ہوگئی ہے،روپے کی قدر پر دباؤبڑھ رہا ہے جس کی وجہ سے اس کی قدر میں مسلسل کمی آرہی ہے،ڈالر 180 کو عبور کرچکا ہے، مہنگائی مزید بڑھ رہی ہے، یہ ملک کے لئے اچھی خبریں نہیں،معیشت ریورس گئیر میں ہے، معیشت، صنعت، کاروبار، تجارت اور روزگار سب کا حال خراب ہے۔ انہوں نے کہا کہ 100 سے زائد اشیاء پر 17 فیصد جی ایس ٹی کا یکساں اطلاق مہنگائی میں مزید اضافے کا سبب بنے گا،افراط زر یا مہنگائی زیادہ ہو تو دنیا میں جی ایس ٹی کم کیاجاتا ہے، پاکستان میں الٹی گنگا بہہ رہی ہے،حکومتی اقدام سے مہنگائی میں اضافہ کے ہولناک نتائج نکلیں گے،اس اقدام کا مطلب یہ ہے کہ حکومت ٹیکس کے دائرے میں اضافہ نہیں کرسکی،یہ قدم عمران نیازی کے اس دعوے پر ایک اور یوٹرن ہے کہ میں ٹیکس ریونیو دوگنا کردوں گا لیکن وہ ناکام ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ جس ملک میں جی ایس ٹی پہلے ہی زیادہ ہے وہاں 17 فیصد کا اشیا ئے ضروریہ پر اطلاق سے مہنگائی مزید بڑھ جائے گی،اشیائے ضروریہ یا ایس پی آئی کی قیمتوں میں پہلے ہی 19.5 فیصد مہنگائی کا خود حکومت اعتراف کررہی ہے،مشیر خزانہ کبھی مہنگائی میں کمی اور کبھی اضافے کے متضاد بیانات دے رہے ہیں،کبھی کہاجاتا ہے کہ پاکستان سستا ترین ملک ہے اور کبھی ملبہ عالمی حالات پر ڈالا جاتا ہے،منی بجٹ مسلط کرنے، قوم اور ملک کے مستقبل سے کھیلنے کے بجائے حکومت استعفیٰ دے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں