نوشکی، شدید سردی،بجلی اور گیس غائب، عوام کومشکلات کا سامنا

نوشکی:نوشکی میں شدید سردی کے موسم میں بجلی اور گیس کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ ٹرپنگ اور آنکھ مچولی سے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا ہے نوشکی بازار سمیت دور دراز علاقوں میں درجنوں ٹرانسفارمر جلنے سے بجلی کی سپلائی معطل ہوگئی ہیں واپڈا اور سوئی گیس کی کارکردگی مایوس کن ہے اعلی حکام نوٹس لیں سابق صوبائی وزیر حاجی میر غلام دستگیر بادینی نے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا کہ نوشکی کے اکثر علاقے بجلی کی بلاوجہ آنکھ مچولی ٹرپنگ اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کے زد میں ہے جبکہ نوشکی سٹی اور قرب و جوار کے علاقے کے عوام بجلی کے ساتھ ساتھ گیس کی طویل لوڈشیڈنگ سے پریشان ہیں واپڈا اور سوئی گیس حکام کو اس شدید سردی کے موسم میں عوام کو ریلیف فراہم کرنا چاہیے تھا مگر بدقسمتی سے دونوں ادارے سفید ہاتھی بن کر عوام کو ظلم و ناانصافی کا نشانہ بنا رہے ہیں انہوں نے کہا کہ یونین کونسل احمد وال کا علاقہ ریکو بیلٹ کے عوام گزشتہ کء دنوں سے بغیر بجلی کے گزارہ کررہے ہیں اسکے علاوہ نوشکی بازار کے متعدد ٹرانسفارمر جل گئے ہیں جس سے دکانداروں اور شہریوں کے ساتھ دفاتر کے عملے کو بھی پریشانیوں کا سامنا ہیں بجلی اور گیس کی خود ساختہ بحران خود ساختہ لوڈشیڈنگ آنکھ مچولی میں کمی کرنے کے بجائے مذکورہ اداروں کے حکام عوامی شکایت کو خاطر میں نہیں لا رہے ہیں جسکی جتنی بھی مذمت کیجاے کم ہیں انہوں نے کہا نوشکی کے عوام گھریلوں صارفین تاجر برادری اور زمیندار طبقہ بروقت اپنی بجلی اور گیس کے واجبات ادا کرتے ہیں اسکے باوجود بجلی اور گیس کی بندش سمجھ سے بالاتر ہے انہوں نے کہا کیسکو چیف اور سوئی سدرن گیس کمپنی کے حکام بالا کو چاہیے کہ وہ نوشکی میں گیس و بجلی کی ٹرپنگ کا نوٹس لیں اور نوشکی بازار سمیت تمام کلیوں میں جلنے والی بجلی ٹرانسفارمرز کی فوری مرمت کرکے عوام کے لیے بجلی کی سپلائی بحال کرائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں