سندھ کے شراب خانوں کا بھتہ وزیراعلی ہاوس اور بلاول ہاوس آتا ہے، حلیم عادل شیخ

کراچی: اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی حلیم عادل شیخ نے کہا ہے کہ سندھ کے شراب خانوں کا بھتہ وزیراعلی ہاس اور بلاول ہاوس آتا ہے، ٹنڈوجام میں کچی شراب پینے سے ہلاکتیں 17 ہوچکی ہیں، ایک مسگی صاحب ہیں جو اس اڈے کے مالک ہیں۔ اپنے جاری کردہ بیان میں حلیم عادل شیخ نے کہا کہ اس مگسی کی حیدرآباد اور ٹنڈوجام کے مالک ایک پی پی پی کے میمن صاحب سے تعلق اور تصاویر ہیں، میمن کے اڈے پر نہ پولیس جاسکتی ہے نہ ایکسائز پولیس۔ حلیم عادل شیخ کا کہنا تھا کہ ٹنڈوجام اور ٹنڈوالہیار میں 17 لوگ کچی شراب پینے سے مرچکے ہیں جبکہ 5 لوگوں کی بینائی چلی گئی اور کئی اسپتالوں میں داخل ہیں۔ حلیم عادل شیخ نے کہا کہ ایکسائیز کا وزیر سندھ اسمبلی میں بابائے جمہوریت بنا ہوا ہے، محکمہ داخلہ اور ایکسائیز سندھ حکومت کے پاس ہے۔ حلیم عادل شیخ نے کہا کہ ان شراب خانوں کا بھتہ وزیراعلی ہاس اور بلاول ہاس آتا ہے، اس واقعے کے ذمے دار وزیر داخلہ سندھ، وزیر ایکسائز سندھ، سندھ پولیس اور ایکسائز پولیس ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہاں تو پیپلزپارٹی کا اپنا بندہ شراب خانہ چلا رہا ہے، ان سب کے خلاف فوری کارروائی ہونی چاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں