ہتک عزت کیس میں بڑی پیشرفت، عدالت نے خواجہ آصف کو جرح کا حق دے دیا

اسلام آباد: خواجہ آصف کے خلاف وزیراعظم کے ہتک عزت کیس میں بڑی پیش رفت سامنے آئی ہے۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے ن لیگی رہنما کو جرح کا حق دے دیا۔ عدالت نے حکم دیا کہ کیس روزانہ کی بنیاد پر سن کر مقررہ وقت میں فیصلہ کیا جائے۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے خواجہ آصف کی عمران خان کے بیان پر جرح کے حق کی درخواست منظور کرلی۔ چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے ریمارکس دیئے کہ ٹرائل کورٹ کو دو ماہ میں فیصلہ کرنے کا کہہ دیتے ہیں، آرڈر پاس کریں گے۔ عدالت نے خواجہ آصف کے وکیل کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ آپ کیوں اس معاملے کو التوا میں ڈال رہے ہیں ؟ آپ غیر ضروری طور پر کیس کو لٹکا رہے ہیں، اس طرح غیر ضروری کیسز سے احتیاط برتیں تو بہتر ہے۔

عدالت نے عمران خان کے وکیل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ بیان پر جرح کرنا تو ان کا حق ہے، ٹرائل کورٹ کو چاہیے تھا، اگلے روز جرح کے لیے رکھ لیتے، فئیر ٹرائل ان کا حق ہے۔ وکیل عمران خان نے کہا کہ ایک سال سے یہ عدالت میں نہیں آئے ؟ جس پر چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ نے کہا کہ 17 دسمبر کو بیان ریکارڈ ہوا، اسی روز ٹرائل کورٹ کیسے ان کا جرح کا حق ختم کر سکتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں