حکومتی نااہلی نالائقی و چوربازاری کی سزا عوام اور کسانوں کو مل رہی ہے، شہبازشریف

اسلام آباد:قائد حزب اختلاف اور پاکستان مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف نے کہا ہے کہ حکومتی نااہلی نالائقی و چوربازاری کی سزا عوام اور کسانوں کو مل رہی ہے، کسان دربدر ہیں اور حکومت ہمیشہ کی طرح غائب ہے۔ تفصیلات کے مطابق شہبازشریف کا ملک میں یوریا کی قلت پر شدید اظہار تشویش کرتے ہوئے کہا ہے کہ کھاد کی اسمگلنگ اوربلیک میں فروخت جاری ہے، ڈی اے پی اور یوریا کی اسمگلنگ روکی جائے، کسانوں کا استحصال بند کیاجائے، کسان چیخ رہے ہیں کہ اسمگلنگ ہو رہی ہے، حکومت کہاں سوئی ہوئی ہے؟ عالمی منڈی میں یوریا کی قیمت زیادہ ہے توا سمگلنگ کی روک تھام کیوں نہ کی گئی؟ یوریا کی اسمگلنگ روکنے کیلئے پیشگی انتظامات کیوں نہ ہوئے؟۔قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ یوریا کی قلت پی ٹی آئی کی بدانتظامی اور کرپشن کا شاخسانہ ہے، یوریا نہ ہونے کا مطلب زرعی پیداوار میں کمی ہے، زرعی ملک جو گندم اور چینی برآمد کرتا تھا آج باہر سے منگوا رہا ہے، ہمارے دور میں ڈی اے پی 2400 کی بوری تھی، آج 10ہزار میں بھی نہیں مل رہی، حکومت کا قیمتوں پر کنٹرول نہ ہونا ناکامی، نااہلی اور بدانتظامی کی انتہا ہے، حکومت کے کپاس کی پیداوار کے بارے میں اعدادوشمار غلط بیانی کے سوا کچھ نہیں ہے۔سابق وزیراعلی پنجاب نے کہا کہ نوازشریف نے 2015 میں تاریخی کسان پیکیج دیا تھا، کسانوں کو سیلاب سے ہونے والے نقصانات میں اربوں روپے امداد دی گئی، یہ پروگرام سیالکوٹ اور لودھراں میں پی ڈی ایم اے کے تعاون سے شروع ہوا تھا، ون ونڈو آپریشن سے ہر مرکز سے 200 کسانوں کو روزانہ کی بنیاد پر امداد مہیا کی گئی لیکن آج کسانوں سمیت عوام کا کوئی پرسان حال نہیں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں