الیکشن کیلئے جنوری کا مہینہ بتانا کافی نہیں، تاریخ کا باقاعدہ اعلان ہونا چاہیے، پیپلز پارٹی

ڈیرہ اسماعیل خان(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات فیصل کریم خان کنڈی نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن کی طرف سے نہ ہی الیکشن شیڈول دیا گیا نہ اسکی تاریخ کا اعلان کیا گیا صرف جنوری کا مہینہ بتانا کافی نہیں ،تاریخ کا باقاعدہ اعلان ہونا چاہیے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فیصل کریم خان کنڈی نے کہا کہ پیپلز پارٹی کا ہمیشہ سے یہ اصولی موقف رہا ہے کہ آئین کے مطابق انتخابات کروائے جائیں ہم نے ساٹھ روز میں الیکشن کرانے پر بھی آمادگی ظاہر کی، اتحادی جماعتوں کی خواہش و مشاورت کا احترام کرتے ہوئے نوے روز کے اندر الیکشن پر اتفاق کیا مگر اس آئینی تقاضے کو پورا نہیں کیا جارہا۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن شیڈول اور اسکی تاریخ کا باقاعدہ اعلان ہی آئینی طریقہ کار کا حصہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر حلقہ بندیوں پر اعتراضات ہوئے اور لوگ معاملات کو عدالتوں میں لے گئے تو کیا تب بھی جنوری میں ہی الیکشن ہونگے، متعدد امور پر پیپلز پارٹی کے خدشات اور تحفظات ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے فیصلہ پارٹی کی سنٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کرے گی ،سابقہ سی ای سی اجلاس میں لیول پلیئنگ کے امور پر تحفظات سے چیئرمین آصف علی زرداری کو آگاہ کرکے انہیں ان امور کے حوالے سے اختیار دیا گیا تھا۔ پنجاب اور خیبرپختونخوا میں نگران سیٹ اپ میں ترقیاتی منصوبوں پر کام جاری ہے، تعیناتیاں بھی ہورہی ہیں ،ہم عوامی حقوق کے امور کی مخالفت نہیں کرتے مگر سندھ میں ترقیاتی کام بند کرنا سیلاب متاثرین کی بہبود کے متعدد منصوبوں پر کام رکوانا ناانصافی ہے، ایسی زیادتی سندھ کے ساتھ کیوں ہورہی ہے ،اسی طرح پنجاب میں ن لیگ کے ساتھیوں کی پسند ونا پسند پر بیوروکریسی کی تعیناتیاں بھی شفاف انتخابات کے حوالے سے خدشات پیدا کرتے ہیں، پیپلز پارٹی کا یہ موقف ہے کہ پاکستان کے معاشی اور سیاسی مشکلات کا حل انتخابات میں ہے ایسے انتخابات جس میں عوام جسے ووٹ دیں اسی کے حق میں ہی وہ ووٹ گنا جائے، آر ٹی ایس سسٹم جام نہ ہو اور حقیقی معنوں میں عوامی ووٹوں کی حامل حکومت کو اقتدار منتقل کیا جائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں