نوجوان ہی نظریاتی سیاست کے مضبوط کرنے کا سبب ہیں، بلوچ سماج کو منتشر کرنے کی کوشش کی جارہی ہے،نوابزادہ لشکری رئیسانی

کوئٹہ،بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے مرکزی انفارمیشن سیکرٹری ناصر بلوچ کے قیادت میں بی ایس او کے کوئٹہ زونل آرگنائزر صمند بلوچ زونل آرگنائزئنگ کمیٹی کے ممبر انجینئر عزیزاللہ بلوچ کالج آف ٹیکنالوجی یونٹ کے سابقہ یونٹ سیکرٹری صدام بلوچ نے بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی کمیٹی ممبر نوابزاہ حاجی لشکری خان رئیسانی سے سراون ہاوس کوئٹہ میں ملاقات کیا اس موقعے پر سیاسی صورتحال و تعلیمی مسائل پر تفصیلی گفتگوں ہوئی
اس موقعے پر نوابزاہ حاجی لشکری خان رہیسانی نے کہا کہ بلوچستان کے سیاست میں بلوچ طلباء بلخصوص بی ایس او کا صف اول اور فیصلہ کن کردار رہی ہے نوجوان ہی نظریاتی سیاست کے مضبوط کرنے کا سبب ہے اس وقت بلوچ سماج کو منتشر کرنے تقسیم در تقسیم کے زریعے مسلط کردہ غیر سیاسی قوتوں کے زریعے حقیقی سیاسی عمل کو مکمل طور پر کمزور کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ان حالات میں باشعور بلوچ نوجوانوں کی زمہ داری بنتی ہے کہ سیاسی کارکنوں کو یکجا کرنے کے لئے علم و زانت اور شعور کے بنیاد پر آگے بڑے انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے تعلیمی اداروں میں شعوری سرکلنگ پر پابندی کا مقصد نوجوانوں کو حقیقی سیاست و حالات کا سیاسی طرز پر مقابلہ کرنے سے روکنا ہے جسکے اثرات یہاں مزید مسائل اور سخت طریقے سے سامنے آئے گا جوکہ مزید مسائل و مشکلات کا سبب بن سکتی ہے تعلیمی اداروں میں شعوری سرکلنگ پر پابندی کے بجائے مثبت سیاسی عمل کو فروغ دے کر ہی نوجوانوں کے احساس محرومی کو کم کیا جاسکتا یے ۔
اس موقعے پر بی ایس او کے وفد نے کہا کہ بی ایس او کی روز اول سے کوشش رہی ہے کہ تمام سیاسی کارکنوں کو تنظیمی اداروں کو مضبوط کرکے اتحاد یکبہتی کے جانب بڑھا جاسکے بی ایس او بلوچ سیاست میں شعوری و بامقصد یکجہتی کے لئے ہر قسم کے قربانی دینے کے لئے تیار ہے اس حوالے سے بی ایس او اپنا بھرپور کردار ادا کررہی ہے انہوں نے اس موقعے پر نوابزادہ حاجی لشکری رہیسانی کو تعلیمی اداروں میں ہونے والی بلوچ دشمن و منفی سازشوں سے آگاہ کیا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں