بلوچستان حکومت کی بد دیانتی اورکرپشن کا پول ساری دنیا کے سامنے کھل گیا ہے،اپوزیشن

کوئٹہ:بلوچستان اسمبلی میں قائد حزب اختلاف ملک سکندر خان ا یڈووکیٹ،سابق وزیراعلیٰ بلوچستان وچیف آف ساراوان نواب محمد اسلم رئیسانی،بلوچستان نیشنل پارٹی کے پارلیمانی لیڈر ملک نصیر احمدشاہوانی،پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے پارلیمانی لیڈر نصر اللہ خان زیرے نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ صوبائی حکومت کی بد دیانتی،بدنیتی اورکرپشن کا پول ساری دنیا کے سامنے کھل گیا ہے تمام انتظامیہ دروازوں پر اپوزیشن نے دستک دی ہے لیکن اب تک شنوائی نہیں ہوئی ہے ہمارا جمہوری احتجاج جاری ہے کیونکہ وزیراعلیٰ بلوچستان سے خیر کی کوئی توقع نہیں ہے اور نہ ہی یہ حکومت جمہوری روایات،سیاسی اور معاشرتی اقدار سے روشناس ہے انہوں نے کہا کہ ایسا محسوس ہورہا ہے کہ بیورو کریسی کے کچھ اہلکار اور زمینداران بلوچستان عوامی پارٹی کے کارکنوں کاکردار ادا کررہے ہیں جوانتہائی خطرناک عمل ہے کیونکہ بیوروکریسی کی توعدالت عظمیٰ نے انتہائی شاندار رہنمائی کی ہے کہ کوئی آفیسر یااہلکار وزیراعلیٰ اور وزراء کے کسی غیر قانونی حکم سے کو ماننے سے انکار کریں وزیراعلیٰ سرکار کی رقم سے بلوچستان عوامی پارٹی کے ہارے ہوئے کارکنوں کو نواز رہے ہیں جو نہ صرف غیر قانونی ہے بلکہ غیر اخلاقی بھی ہے راتوں میں محلوں میں جاکر سروے کرنا اور معلومات کرنا ہمارے نظروں میں ہے اور وقت آنے پرسارے حالات عوام کے سامنے رکھیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں