زراعت تباہ ہوچکی، زمینداروں کے قرضے معاف کیے جائیں، ملک نصیر شاہوانی

کوئٹہ:زمیندار ایکشن کمیٹی بلوچستان کے چیئرمین ورکن صوبائی اسمبلی ملک نصیراحمد شاہوانی نے مطالبہ کیاہے کہ زمینداروں کے زرعی قرضے معاف کئے جائیں کیونکہ بجلی کی مسلسل لوڈشیڈنگ سے زمینداری کا شعبہ تباہ اور زمیندار نان شبینہ کے محتاج بن گئے ہیں،زمینداروں کی زرعی اجناس کی قیمتیں نہ ہونے کی وجہ سے زمینداروں کو مالی نقصان کاسامنا ہے جبکہ ایران سے سیب،ٹماٹر ودیگر کی غیرقانونی اسمگلنگ کی وجہ سے رہی سہی کسر پوری ہوگئی ہے۔ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز اپنے جاری کردہ بیان میں کیا۔ ملک نصیر احمد شاہوانی نے کہاکہ بلوچستان میں بارشیں نہ ہونے اور بجلی کی مسلسل لوڈشیڈنگ کی وجہ سے زمینداربری طرح پس گئے ہیں ایسے وقت میں جب وہ مشکلات سے دوچار ہیں تو وہ یہ سکت نہیں رکھتے کہ وہ زرعی قرضے دے سکے،انہوں نے کہاکہ زمینداروں کی زرعی اجناس کی قیمتیں نہ ہونے کی وجہ سے زمینداروں کو مالی نقصان کاسامنا ہے جبکہ ایران سے سیب،ٹماٹر ودیگر کی غیرقانونی اسمگلنگ کی وجہ سے رہی سہی کسر پوری ہوگئی ہے،انہوں نے کہاکہ زمینداروں کو مشکلات کو مدنظررکھتے ہوئے حکومت فوری طورپر زمینداروں کے اوپر زرعی قرضے معاف کئے جائیں یا ری شیڈول کرکے آئندہ کیلئے وقف کیاجائے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں