حکمرانوں نے ملک کو آئی ایم ایف کے حوالے کر دیا ہے، مولانا عبدالواسع

کو ئٹہ:جمعیت علما اسلام کے صوبائی امیر بلوچستان و رکن قومی اسمبلی مولانا عبدالواسع نے کہا ہے کہ سلیکٹڈ حکمرانوں نے ملک کو آئی ایم ایف کے حوالے کردیا ہے جس کے بعد ملک میں ترقی و خوشحالی کا دور نہیں آئے گا، مہنگائی اور غربت کی وجہ سے عوام خودکشیا ں کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں، یکم دسمبر سے ملک پر مہنگائی کا نیا بم پھینکنے کی تیاریاں کی جارہی ہے، جمعیت علما اسلام اور پی ڈی ایم موجودہ حالات پر خاموش نہیں رہیں گے،موجودہ حکومت غریبوں کو کنگال اور ملکی معیشت کو برباد کرچکی ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بات چیت کرتے ہو ئے کیا۔ انہوں نے کہاکہ حکومت نے صرف رواں مالی سال کے ابتدائی چار ماہ میں تین ارب 90کروڑ ڈالر کے غیر ملکی قرضے دئیے ان کو جواب دینا ہوگا کہ گزشتہ مالی سال میں 14ارب 28کروڑ ڈالر کے بیرونی قرضے لیے گئے تھے آئی ایم ایف کے حکم پر چار سو ارب روپے کے لگ بھگ اضافی ٹیکس بھی لگایا جائے گا آنے والے مہینے میں مہنگائی کی بدترین طوفان کی تیاریاں ہورہی ہے عوام سے ٹیکسز اور بل وصول کیے جارہے ہیں لیکن سہولت میسر نہیں کی گئی ہے انہوں نے کہاکہ قرض تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا ہے لیکن عوام کو کچھ نہیں ملا نہ ملک میں کوئی بہتری آئی یہ پیسہ آخر گیا کہاں جولائی اکتوبر کے دوران حکومت کے غیر ملکی قرضے میں 18فیصد ہوشربا اضافہ ہوا انہوں نے کہاکہ اسٹیٹ بینک کا قرض کیلئے حکومت پر دروازے بند کرنا پاکستان کیلئے خطرناک ثابت ہوگا موجودہ حکومت نے آئی ایم ایف کی شرائط پر پاکستان کی معاشی خودمختاری گروی رکھ دی ہے اس کا حساب دینا ہوگا ورنہ حالات کے ذمہ دار یہی اور سلیکٹڈ حکمران ہوں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں