چوبیس گھنٹوں کے دوران کرونا کے باعث ایک موت ہوئی،وہ میرے بہنوئی تھے،مراد علی شاہ

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا کے باعث ایک موت ہوئی ہے ، یہ موت میرے بہنوئی سید مہدی شاہ کی تھی۔وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ میرے بہنوئی سید مہدی شاہ 52 سال کے تھے، 28 مارچ کو ان کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا، مہدی شاہ کورونا سے جنگ جیت گئے تھے، ا ن کے 2 ٹیسٹ منفی آئے تھے۔سید مراد علی شاہ نے کہا کہ مہدی شاہ کوکورونا کے باعث پھیپھڑوں اور دیگر امراض نمودار ہوئے تھے، ان مسائل کے سبب مہدی شاہ زندگی کی بازی ہار گئے، اسپتال میں مہدی شاہ کو کورونا کا مریض ڈکلیئر نہیں کیا تھا اس کے باوجود ہم نے مہدی شاہ کی تدفین کورونا SoP کے بنیاد پر کی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ ہزاروں لوگوں نے اس دکھ کی گھڑی میں تعزیتی پیغامات بھیجے ہیں، تعزیتی پیغام بھیجنے والوں میں زیادہ تر لوگ میرے جاننے والے نہیں ہیں، میں ان سب کا شکرگزار ہوں جنہوں نے تعزیت کی ہے۔وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کا کہنا تھا کہ دوستوں سے گزارش ہے کہ مہدی شاہ کی مغفرت کے لیے اپنے گھروں میں دعا کریں۔وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کورونا وائرس کی صورتحال سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے گذشتہ 24 گھنٹوں میں 586 مزید ٹیسٹ کئے ہیں جننئے ٹیسٹ میں مزید 86 کورونا میں مبتلا افراد پائے گئے ہیں جبکہ کل تک 11623 ٹیسٹ کئے تھے اور نئے اعداد شامل کرنے کے بعد کل تعداد 12209 ہوگئی ہے ۔سید مراد علی شاہ نے کہا کہ اس حساب سے کورونا کے مریضوں کی کل تعداد 1214 ہوگئی ہے جبکہ صحتیاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 358 ہے جو کُل مریضوں کا 30 فیصد ہے اور کورونا کے سبب جاں بحق ہونے والوں کی کُل تعداد 22 ہوگئی ہے، جو کُل مریضوں کا 1.8 فیصد ہے۔وزیراعلیٰ سندھ نے عوام سے ایک بار پھر اپیل کی کہ اپنے گھروں میں رہیں اور ایک دوسرے سے فاصلہ رکھیں۔انہوں نے مزید کہا کہ اپنی، اپنے خاندان اور دوستوں کی زندگی محفوظ بنانے میں اپنا کردار ادا کریں اور حکومتی فیصلوں پر عملدرآمد کر کے کورونا کو شکست دیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply