بلوچستان، برقی قلت میں اضافہ، سرکاری ہسپتالوں میں آکسیجن گیس کی سپلائی متاثر

کوئٹہ ;بجلی کی لوڈشیڈنگ میں اضافہ کے باعث بلوچستان کے سرکاری ہسپتالوں میں آکسیجن گیس کی سپلائی متاثر‘قلت سے کورونا وائرس سے متاثرہ افرادکی اموات کا خدشہ ہے آکسیجن گیس فراہم کرنے والی کمپنی نے کیسکو حکام سے معاملہ حل کرنے کا مطالبہ کردیا تفصیلات کے مطابق ملک بھر کی طرح بلوچستان کے ہسپتالوں میں آکسیجن گیس کی ہنگامی بنیادوں پر ضرورت ہے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ سمیت بلوچستان میں کیسکو کی جانب سے لوڈشیڈنگ کے دورانیہ میں اضافہ کیا گیا ہے جس کی وجہ سے لوگوں کو مشکلات کا سامنا ہے دوسری جانب صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں سرکاری ہسپتالوں کو آکسیجن گیس فراہم کرنے والی کمپنی عبداللہ اینڈ برادرز آکسیجن گیس کمپنی کی جانب سے محکمہ کیسکو کو خط لکھا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ صوبہ میں کورونا وائرس کی صورتحال کے پیش نظر ہسپتالوں میں آکسیجن گیس کی ڈیمانڈ میں اضافہ ہو گیا ہے جو 20 سے 90 فیصد تک پہنچ گیا ہے کمپنی کی جانب سے ہسپتالوں کو آکسیجن گیس کی سپلائی 24 گھنٹے جاری ہے تاہم کیسکو کی جانب سے لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 14 گھنٹے تک بڑھانے کی وجہ سے آکسیجن گیس کی پروڈیکشن کمی واقع ہوئی ہے جس کی وجہ سے ہسپتالوں کو آکسیجن گیس کی ڈیمانڈ کو پورا نہیں کیا جاسکتاآکسیجن گیس کی قلت کے باعث ہسپتالوں میں کورونا سے متاثرہ اور دیگر مریضوں کی اموات کا بھی خدشہ ہے کمپنی کی جانب سے آکسیجن گیس کی ڈیمانڈ میں اضافے پر گیس پروڈیکشن بڑھانے کے لئے دو شفٹوں میں کام شروع کیا گیا تھا تاکہ آکسیجن گیس کی کمی دور ہو سکے خط میں کیسکو حکام مسئلہ کی سنگینی کو مدنظررکھتے ہوئے بجلی کا مسئلہ حل کرائیں تاکہ تمام ہسپتالوں کو آکسیجن گیس کی فراہمی بغیر رکاوٹ کے جاری رہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں