کورونا وائرس سے متاثرہ مریض روزہ رکھنے سے مستثنیٰ ہے، نورالحق قادری

اسلام آ باد: وفاقی وزیر مذہبی برائے امور نورالحق قادری نے کہا ہے کہ کورونا وائرس سے متاثرہ مریض کو روزہ رکھنے سے استثنیٰ حاصل ہے، کورونا وائرس اور رمضان کا ساتھ رہے گا، تراویح گھروں میں ادا ہوں گی یا مساجد میں مشاورت کے بعد ہی کچھ کہہ سکیں گے۔ جمعہ کو نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اسلامی نظریاتی کونسل ایک آئینی ادارہ ہے جس کی اہمیت سے انکار نہیں کیا جا سکتا۔انہوں نے کہا کہ نماز جمعہ گھروں پر ادا کی جائے کیونکہ دین آسانی کا نام ہے، قرآن پاک اور احادیث میں ثابت ہے کہ لوگوں کے لیے آسانیاں پیدا کریں۔وفاقی وزیر برائے مذہبی امور نے کہا کہ کورونا وائرس اور رمضان کا ساتھ رہے گا، تراویح گھروں میں ادا ہوں گی یا مساجد میں مشاورت کے بعد ہی کچھ کہہ سکیں گے۔ نورالحق قادری نے کہا کہ تمام مکاتب فکر کی اتفاق رائے سے رمضان میں تراویح کے حوالے سے مشاورت کریں گے، سماجی دوری کی حکمت عملی کو اپنا کر گھروں میں تراویح ادا کی جاسکتی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ گھروں میں جماعت کے ساتھ نماز یا تراویح کی ادائیگی مناسب بات ہوگی، گھروں میں جماعت کے ساتھ تراویح سے امام یامقتدی بننے کی مشق بھی ہوجائے گی۔وفاقی وزیر برائے مذہبی امور نے کہا کہ ملک بھر لاک ڈاؤن کی صورت میں مساجد کو بھی بند کرنے پر مشاورت کریں گے۔انہوں نے کہا کہ سعودی عرب نے کہا ہے کورونا کو قابو کرنے میں ایک سال لگ سکتا ہے۔نورالحق قادری کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان والد کی طرح قوم کو سمجھانے کی کوشش کررہے ہیں، وہ تو منت سماجت کرکے قوم سے تعاون کی اپیل کررہے ہیں۔وزیر برائے مذہبی امور کا کہنا تھا کہ عوام اور حکمران ایک جانب لیکن پولیس سب سے مختلف ہے، پولیس لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے والوں کو مرغا بنا رہی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ مشکل حالات میں طبی عملہ ولیوں جیسا کردار ادا کررہا ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply