الیکشن کمیشن نے سابق وزیراعلیٰ کو پارٹی صدارت چھوڑنے کے باوجود پارٹی صدر مخاطب کرتے ہوئے خط لکھ دیا

کوئٹہ: الیکشن کمیشن آف پاکستان نے سابق وزیراعلیٰ جام کمال خان کو بلوچستان عوامی پارٹی کی صدارت چھوڑنے کے باوجود پارٹی صدر مخاطب کرتے ہوئے خط لکھ دیاجبکہ بی اے پی کے سینئر رہنماء نے پارٹی صدر کے حوالے سے الیکشن کمیشن کا ریکارڈ اپ ڈیٹ نہ ہونے کی وضاحت کردی، تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن آف پاکستان کی جانب سے سابق وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کو بطور پارٹی صدر مخاطب کرتے ہوئے انٹر ا پارٹی انتخابات نہ کروانے پر 18جنوری 2022صبح 10بجے تک پیش ہونے کی ہدایت کردی ہے، اس حوالے سے رابطہ کرنے پر بلوچستان عوامی پارٹی کے ایک سینئر رہنماء نے بتایا کہ سابق وزیراعلیٰ جام کمال خان کے پارٹی صدارت چھوڑنے کے بعد بلوچستان عوامی پارٹی کے قائم مقام صدر میر ظہور بلیدی ہیں اور اس حوالے سے الیکشن کمیشن کو بھی آگاہ کردیا گیا ہے تاہم الیکشن کمیشن میں ریکارڈ اپ ڈیٹ نہ ہونے کی وجہ سے سابق صدر کو مراسلے میں مخاطب کیا گیا ہے انہوں نے بتایاکہ ریکارڈ کی تجدید اگلے ہفتے تک مکمل ہونے کے بعد میرظہور بلیدی ہی پارٹی کے قائم مقام صدر تصور ہونگے بی اے پی رہنماء کے مطابق سابق صدر جام کمال خان کی بلوچستان ہائی کورٹ اور الیکشن کمیشن دونوں کی جانب سے پارٹی صدارت استعفا دینے کی توثیق ہوچکی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں