بلوچستان کے عوام کو ہمیشہ ترقی کی وعدوں سے ٹرخایا گیا،مولاناعبدالقادر لونی

کوئٹہ:جمعیت علماء اسلام نظریاتی بلوچستان کے امیر مولاناعبدالقادر لونی صوبائی جنرل سیکرٹری مولاناحافظ عبدالاحد کبدانی سینئر نائب امیر مولانا محمد حیات نائب امیر مولانا عبدالروف نائب امیر سید حاجی عبدالستارشاہ چشتی صوبائی سرپرست مولاناخدائے نظر ڈپٹی جنرل سیکرٹری حاجی عبیداللہ حقانی جوائنٹ سیکرٹری میر مبارک محمد حسنی سرپرست مولانانعمت اللہ صوبائی سیکرٹری اطلاعات مولوی رحمت اللہ حقانی حافظ ثناء اللہ شاہ نے کہا کہ بلوچستان کے عوام کو ہمیشہ ترقی کی وعدوں سے ٹرخایا گیا صوبے کی عوام صرف خوشخبریاں سن رہے ہیں لیکن عملًا اب تک کچھ نہیں ہوا صوبے کی اکثر اضلاع اکیسویں صدی میں صحت، تعلیم اور زندگی کی تمام سہولیات وضروریات سے محروم ہے بلوچستان کوترقی کی راہ پر گامزن کرنے کی دعوے سن سن کر کان پک چکے بار بار صوبے کی عوام کو بلوچستان پیکج کے خوشنما نعروں سے دھوکہ دئیے گئے یہاں تک کہ صوبے کی اکثر اضلاع اپنے وسائل سے محروم ہے وسائل اور معدنیات سے آج تک صوبے کی عوام استفادہ کرنے سے محروم رکھا ہے صرف ایک ریکوڈک منصوبے سے صوبے کے دس ہزار نوجوانوں کو براہ راست روزگار مل سکتا تھا۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان کی محرومیوں اور پسماندگی کا ازالہ دعووں سے نہیں عملی اقدامات سے ہوگا۔ معدنی وسائل اور نئی صنعتوں کی قیام سے بلوچستان کی احساس محرومی کا خاتمہ ممکن ہے بلوچستان میں بے پناہ معدنی دولت اور وسائل پر اختیارات اور کوٹہ ملنے سے بلوچستان کی ترقی اور خوشحالی کی منازل طے کی جاسکتی ہے۔ بلوچستان میں معدنیات،ماہی گیری اور آئل و گیس کے شعبوں میں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں لیکن بدقسمتی سے بلوچستان کو محروم رکھا ہے انہوں نے کہا کہ بلوچستان کی پسماندگی اور احساس محرومی کی خاتمہ کے لئے ٹھوس اور نتیجہ خیز اقدامات کی ضرورت ہے تمام پسماندہ اضلاع کے لیے یکساں بنیادوں پر ترقی، نوجوانوں کے لیے روزگار کی مواقع اور عوام کے لیے صحت کارڈ، زراعت کی پیکج شروع کیاجائے صوبے کی اکثر عوام اکیسویں صدی میں صحت، تعلیم اور زندگی کی تمام سہولیات وضروریات سے محروم ہے بلوچستان کو عملاً ترقی کی راہ پر گامزن کرے ویسے ترقی کی دعوے تو صوبے کی عوام ستر سالوں سے سن سن کر کان پک چکے صوبے کی تمام مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر حل کرنے کی ضرورت ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں