کمشنرمکران کا مسائل کے حل کیلئے سویلین و عسکری حکام اور اسٹیک ہولڈرز کیساتھ اجلاس

تربت(نمائندہ انتخاب ) کمشنر مکران ڈویژن شبیر احمد مینگل کی صدارت میں آئی جی ایف سی بلوچستان (سا¶تھ )میجر جنرل کمال انور اور جنرل آفیسر کمانڈنگ(جی او سی)44 ڈویژن میجر جنرل عنایت حسین اور ریئر ایڈمرل کموڈور ویسٹ جاوید حسین کے ہمراہ ڈویژنل جائزہ کمیٹی کا اجلاس کمشنر مکران آفس تربت میں منعقد ہوا، اس موقع پر ڈپٹی کمشنر کیچ حسین جان بلوچ، وی سی تربت یونیورسٹی جان محمد بلوچ، اسسٹنٹ پی ڈی گوادر پورٹ اتھارٹی محمد رفیق، محمد نصراللہ پی ڈی گوادر ڈیولپمنٹ اتھارٹی، محکمہ صحت کے ڈویژنل ڈائریکٹر ڈاکٹرمیر یوسف خان سمیت آل پارٹیز کیچ کے نمائندے جماعت اسلامی کی جانب سے غلام یاسین بلوچ، نیشنل پارٹی کی جانب سے محمد جان دشتی، پیپلز پارٹی کی جانب سے نواب شمبے زئی، بی این پی مینگل کی جانب سے میجر جمیل احمد، پی این پی عوامی کی جانب سے میر غفور بزنجو کے علاوہ سابقہ سینیٹر میر اسلم بلیدی بھی اجلاس میں شامل تھے، اس دوران اجلاس میں مختلف ایجنڈا پوائنٹ جن میں سرحدی تجارت، بلدیاتی انتخابات، امن و امان کی صورتحال، صحت اور تعلیم کے مسائل اورگوادر میں ڈی سیلینیشن پلانٹ کے ذریعے صاف پینے کے پانی کی فراہمی کے علاوہ مکران ڈویژن میں ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل سمیت دیگر کئی اہم مسائل پر گفتگو کی گئی، کمشنرمکران ڈویژن شبیر احمد مینگل نے اپنے ابتدائی کلمات میں میٹنگ کے شرکاءکا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ ڈویژنل سطح پر جائزہ کمیٹی کے اجلاس کا مقصد سویلین اور عسکری حکام سمیت تمام سٹیک ہولڈرز کے ساتھ ملکر یہاں کے مسائل کی نشان دہی کرنا ہے اور ان مسائل کے حل کے بارے میں ایک مشترکہ حکمت عملی ترتیب دینا ہے تاکہ علاقے کے عوامی مسائل میں کمی لاکر عوام کو ریلیف پہنچائی جاسکے، انہوں نے کہا کہ اس قسم کے میٹنگ کے انعقاد کا بنیادی مقصد سرکاری محکموں کی کارکردگی میں بہتری لاکر انہیں متحرک کرنا ہوتا ہے تاکہ وہ صحیح طریقہ سے کام کرکے عوامی مسائل کو بہتر انداز میں حل کر سکیں، جنرل افیسر کمانڈنگ (جی او سی) 44 ڈویژن میجر جنرل عنایت حسین نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں چاہیے کہ ہم اپنے تعلیمی اداروں میں آرٹس اور سائنس کی مضامین میں تعلیم دینے کے علاوہ ٹیکنیکل تعلیم کی طرف بھی توجہ دیں تاکہ ہمارے بےروزگار نوجوانوں ہنر حاصل کرکے ایک باوقار روزگار حاصل کرسکیں، انہوں نے کہا کہ ہمیں ساحلی علاقوں میں تعلیمی اداروں میں مائیگیری کے متعلق خصوصی مضامین پڑھانی چاہیے تاکہ یہاں کے غریب نوجوان ماہیگیری کی جدید سہولیات سے مستفید ہوسکیں،آئی جی ایف سی سا¶تھ میجر جنرل کمال انور نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کے میٹنگ کا انعقاد بہت اچھی بات ہے کیونکہ اس طرح کے فورمز میں تمام سروس پرووائیڈر ایک جگہ پر موجود ہوتے ہیں جس میں بات چیت کے ذریعے مختلف مکتبہ فکر کے لوگوں کو ایک دوسرے کے مسائل کو سمجھنے میں آسانی ہوتی ہے، انہوں نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ اس طرح کے مشاورتی اجلاس کا انعقاد تواتر کے ساتھ کیا جائے تاکہ عوامی مسائل کی نشان دہی کرکے ان کے حل کو ممکن بنایا جاسکے، انہوں نے کہا کہ ایف سی اور پاک فوج سویلین اداروں کی مدد کے لیے ہر وقت تیار ہیں اور وہ امید کرتے ہیں کہ تمام شرکاءاپنے مشوروں اور تجاویز کو ایک دوسرے کے ساتھ شیئر کریں گے تاکہ ہم ملک کے مسائل کو مل بیٹھ کر ایک بہتر انداز میں حل کر سکیں، ریئر ایڈمرل کموڈور ویسٹ جاوید حسین نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں ایک دوسرے کے مسائل کو مل بیٹھ کر سمجھنے اور عوام کی ترقی کے بارے میں سوچنے کی ضرورت ہے تاکہ ملک کو خوشحالی کی جانب گامزن کیا جاسکے، انہوں نے سی پیک کے حوالے سے چین کے خدشات کو دور کرنے کی اہمیت پر بھی زور دیا، قبل ازیں ڈپٹی کمشنر کیچ حسین جان بلوچ نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ضلعی انتظامیہ نے بلدیاتی انتخابات کے حوالے سے اپنی تیاریاں مکمل کی ہیں جبکہ اس وقت ضلع کیچ سمیت مکران ڈویژن میں امن و امان کی صورتحال قانون نافذ کرنے والے اداروں کے مکمل کنٹرول میں ہے اور انہیں امید ہے کہ بلوچستان کے دیگر علاقوں کی طرح ضلع کیچ میں بلدیاتی انتخابات شفاف انداز میں سرانجام پائیں گے، انہوں نے کہا کہ اس وقت بلوچستان کے دیگر علاقوں کی طرح ضلع کیچ میں بھی بلدیاتی انتخابات میں امیدوار بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہے ہیں جس کے لئے ریٹرننگ افسران اور دیگر انتخابی عملہ ترتیب دےدیا گیا ہے، انہوں نے کہا کہ انتخابی عملے کی حفاظت کے لیے بھاری تعداد میں نفری تعینات کی جائے گی تاکہ الیکشن کے دوران کوئی ناخوش گوار واقعہ پیش نہ آئے، انہوں نے سرحدی تجارت کے حوالے سے بھی بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ اس حوالے سے انہوں نے اپنے ایرانی ہم منصبوں سے ملاقات کیے ہیں جس میں بارڈر ٹریڈ کے معاملات کو حتمی شکل دے دی گئی ہے،انہوں نے کہا کہ بارڈر کے دونوں جانب مارکیٹ کی تعمیر کا کام زور شور سے جاری ہے اور وہ امید کرتے ہیں ان مارکیٹوں کی تکمیل کے بعد باقاعدہ تجارت کا آغاز شروع کیا جائے گا، انہوں نے متعلقہ اداروں کی جانب سے بارڈر کے پاکستانی جانب سفری ٹرمینل، ضروری بنیادی ڈھانچے اور دیگر سہولیات کی جلد تعمیرات کی اہمیت پر زور بھی دیا،ڈی آئی جی پولیس مکران غلام اظفر نے مکران ڈویژن میں محکمہ پولیس کی کارکردگی پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ مکران میں امن و امان کی صورتحال تسلی بخش ہے انہوں نے کہا کہ ہم نے پولیس کو جدید اسلحہ اور دیگر ضروری ساز وسامان سے لیس کردیا ہے اور چوکیوں میں ناکہ بندی سخت کردی گئی ہیں جسکے نتیجے میں کئی اشتہاری ملزمان گرفتار کرلیے گئے ہیں،اس دوران انہوں نے مختلف ڈی پی او آفس میں کمپیوٹرائزڈ نظام ذریعے عوام کو بروقت ڈرائیونگ لائسنس کے اجراءاور نو تعینات ملازمین کے لئے فوری ڈاکومنٹس کی ویری فکیشن کے پروسیس کا بھی ذکر کیا، وائس چانسلر تربت یونیورسٹی جان محمد بلوچ نے تعلیمی اداروں میں علاقوں کی ضروریات کے حساب سے کورسز ڈیزائن کرنے کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ ہمیں موجودہ دور کے اسکوپ کو مدنظر رکھ کر مضامین کی سلیکشن اور سلیبس ترتیب دینی چاہیے تاکہ ہمارے نوجوانوں کو زیادہ سے زیادہ روزگار کے مواقع مل سکیں، گودار ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے اسسٹنٹ پی ڈی محمد نصراللہ نے گوادر شہر میں صاف پینے کے پانی کی فراہمی،پاک چین فرینڈشپ ہسپتال،گوادر انٹرنیشنل ائیرپورٹ اور اولڈ ٹا¶ن میں ترقیاتی منصوبوں کے بارے میں بریفنگ دی جبکہ گودار پورٹ اتھارٹی کے اسسٹنٹ پی ڈی محمد رفیق نے گوادر پورٹ کی تجارتی سرگرمیوں کے بارے میں بھی شرکاءکو بریفنگ دی، ڈویژنل ڈائریکٹر محکمہ ہیلتھ ڈاکٹر میر یوسف بلوچ نے محکمہ صحت کے تحت چلنے والے مختلف ہسپتالوں،آر ایچ سیز اور بی ایچ یوز میں صحت کی سہولیات کی فراہمی کے بارے میں بریفنگ دی ،پرنسپل ڈگری کالج تربت واحد بخش بلوچ نے مکران میں تعلیمی اداروں کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے اپنے خیالات کا بھی اظہار کیا، میٹنگ میں سابقہ سینیٹر اسلم بلیدی نے تربت بلیدہ روڈ سمیت تحصیل بلیدہ کے دیگر ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل پر زور دیا اور محکمہ تعلیم میں اصلاحات لاکر دیہی علاقوں میں اساتذہ کی بھرتیوں کی اہمیت پر زور دیاجبکہ جماعت اسلامی کے راہنما غلام یاسین بلوچ نے تربت میں اے جی آفس کی شاخ اور مکران میں تعلیمی بورڈ کے قیام پر اصرار کیا، پی این پی مینگل کے راہنما میجر جمیل احمددشتی نے دیہی علاقوں میں تعلیم اور صحت کی سہولیات فراہمی کی اپیل کی،پیپلز پارٹی کے رہنما نواب شمبے زئی نے بارڈر ٹریڈ کو ایک میکنزم کے تحت چلانے کی استدعا کی،پی این پی عوامی کے راہنما غفوراحمد بزنجو نے امید کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس میٹنگ کے مثبت نتائج برآمد ہوںگے،نیشنل پارٹی کے رہنما محمد جان دشتی امید کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان مسائل پر بروقت عملدرآمد کیا جائے گا، میٹنگ میں ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ شے ظہور الحسن بلوچ،اور ڈائریکٹر ڈویلپمنٹ پی اینڈ ڈی خالد حسین بھی شریک تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں