امریکا کا حزب اللہ کمانڈر شیخ محمد الکوثرانی کی معلومات دینے پر ایک کروڑ ڈالر انعام کا اعلان

واشنگٹن,امریکا نے ایران کی القدس فورس کے مقتول سربراہ جنرل قاسم سلیمانی کے ساتھی اور عراق میں حزب اللہ کے ایک سینئر فوجی کمانڈر شیخ محمد الکوثرانی کے بارے میں معلومات فراہم کرنے والے کے لیے ایک کروڑ ڈالر انعام کی پیش کش کردی۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق انعام کا اعلان کرتے ہوئے امریکی محکمہ خارجہ نے کہا کہ محمد الکوثرانی نے رواں برس جنوری میں بغداد میں امریکی ڈرون حملے میں ہلاک ہونے والے ایرانی پاسداران انقلاب کے کمانڈر قاسم سلیمانی کے بعد ’ایران سے منسلک نیم فوجی دستوں کے کچھ سیاسی رابطوں کی ذمہ داری سنبھال لی ہے۔انہوں نے کہا کہ محمد الکوثرانی عراق میں نجی ملیشیا اور گروہوں کی کارروائیوں کو مدد فراہم کرتے ہیں۔ان کا کہا تھا کہ مذکورہ گروپ مظاہروں کو پرتشدد کرتا ہے، غیر ملکی سفارتی مشنوں پر حملہ اور وسیع پیمانے پر منظم جرائم پیشہ سرگرمیوں میں مصروف ہے۔واضح رہے کہ محمد الکوثرانی کو 2013 میں امریکا نے ایک عالمی دہشت گرد قرار دیا تھا جس پر عراق میں مسلح گروہوں کو مالی اعانت فراہم کرنے اور عراقی جنگجوؤں کو شام جانے کے لیے صدر بشار الاسد کی حکومت کے خلاف بغاوت ختم کرنے کی کوششوں میں شامل ہونے میں مدد فراہم کرنے کا الزام عائد ہے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply