وندر، کشتی گہرے سمندر میں ڈوب گئی، ایک شخص لاپتہ تین ساحل سمندر پر پہنچ گئے

وندر :گہرے سمندر سے سونمیانی ہور میں داخل ہونے کی کوشش میں ڈھونڈہ کشتی الٹ کر ڈوب گئی ناخدہ اکبر بنگالی لاپتہ جبکہ تین ماہی گیر تیر کر ساحل سمندر پر پہنچ گئے تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز سونمیانی وندر کے ساحلی علاقے ڈام بندر سے کیکڑا کی شکار کیلئے جانے والی ڈھونڈہ کشتی جس میں فشریز کے عملے کے مطابق چار بنگالی ماہی گیر سوار تھے جو کہ جمعہ کی صبح کو سمندر کیلئے نکلے تھے گہرے سمندر سے واپسی کے وقت اچانک سمندری طوفانی ہوائیں شروع ہونے کی وجہ سے گہرے سمندر سے واپس آتے ہوئے سونمیانی ہور کے چینل میں اٹھنے والی طوفانی لہروں کی زد میں آکر ان کی ڈھونڈہ کشتی الٹ کر ڈوب گئی جس میں سوار چار ماہی گیروں جن میں ڈھونڈہ کشتی کا ناخدہ اکبر بنگالی نظام بنگالی جبکہ دو دیگر ماہی گیر جن کے نام معلوم نہیں ہوسکے وہ ڈھونڈہ کشتی کے سمندر میں الٹ جانے کی وجہ سے ڈوبنے لگے جن میں سے تین ماہی گیر نظام بنگالی اور دو ماہی گیروں جن کے نام معلوم نہ ہوسکے انہوں نے تیر کر ساحل سمندر پر رسائی حاصل کی جبکہ ڈھونڈہ کشتی کا ناخدہ اکبر بنگالی نامی ماہی گیر تاحال لاپتہ ہے سمندر میں ڈھونڈہ کشتی کے ڈوبنے کی اطلاع موصول ہونے پر ڈائریکٹر فشریز لسبیلہ عبدالمالک نے اسسٹنٹ ڈائریکٹر فشریز عبدالرزاق انگاریہ کو فوری طور پر ساحلی علاقے ڈام بندر میں پہنچ کر ماہی گیروں کو ریسکیو کرکے کنارے پر لانے کی ہدایت جاری کی جس پر اسسٹنٹ ڈائریکٹر فشریز عبدالرزاق انگاریہ نے ڈام بندر پر پہنچ کر فشریز کے دیگر عملے کو ریڈ الرٹ کرکے ڈوبنے والی ڈھونڈہ کشتی کے لاپتہ ہونے ماہی گیر اور دیگر تین ماہی گیروں کو ریسکیو کرنے کیلئے ڈام بندر میں موجود ہیں جبکہ طوفانی ہواں کے باعث پیدا ہونے والی سمندری لہریں ماہی گیروں کو ریسکیو کرنے کے عمل میں رکاوٹ بن رہی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں