قومی اور صوبائی الیکشن ایک ساتھ ہونے چاہئیں، رانا ثناء اللہ

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی وزیرِ داخلہ رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ ہماری رائے ہے کہ قومی اور صوبائی الیکشن ایک ساتھ ہونے چاہئیں،الیکشن کمیشن کو بہتر فیصلہ کرنا چاہیے، نیا الیکشن استحکام کا باعث بننا چاہیے نہ کہ نئے دھرنے اور افراتفری کا ۔ نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثناء اللہ نے کہا کہ یہ شخص 2014 سے ملک کو بحران کا شکار کرنے میں لگا ہوا ہے، اگر اس کی ضد پر یہ دو صوبائی الیکشن ہو جائیں تو نگراں سیٹ اپ نہیں ہو گا۔انہوںنے کہا کہ اگرجنرل الیکشن ہو جائیں تو دو صوبوں میں نگراں سیٹ اپ نہیں ہو گا، 5 سال بعد پھر یہی ہو گا، ایسی صورت میں الیکشن متنازع ہوں گے۔وفاقی وزیرِ داخلہ نے کہا کہ اگر یہ ہارے تو ہم پر الزام لگائیں گے کہ نگراں سیٹ اپ نہیں تھا، انہوں نے اثر و رسوخ استعمال کیا، یہ ایسی صورتِ حال ہے کہ الیکشن کمیشن کو بہتر فیصلہ کرنا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ نیا الیکشن استحکام کا باعث بننا چاہیے نہ کہ نئے دھرنے اور افراتفری کا، شفاف الیکشن میں کوئی چیز حائل ہے تو اس کاتدارک کرنا الیکشن کمیشن کی ذمے داری ہے، الیکشن کمیشن چاہے تو عدالت میں ریویو میں جا سکتا ہے۔ وفاقی وزیرِ داخلہ رانا ثنا اللہ نے کہا کہ عمران خان کو ٹیریان کیس میں نااہل ہونا ہے تو اپنی غلطی سے ہی ہونا ہے۔انہوںنے کہا کہ توشہ خانے کی گھڑیاں کیا مسلم لیگ( ن) نے ان سے کہا تھا کہ چوری کریں، جعلی رسیدیں بنائیں، یہ سب عمران خان کا اپنا کیا دھرا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں