بھارتی اداکار دلیپ کمار کی موت کی تردید

نئی دہلی :بھارتی فلموں کے شہرہ آفاق اداکار شہنشاہ جذبات کے لقب سے مشہور دلیپ کمار کو سانس لینے میں شکایت کے بعد اتوار کے روز ممبئی کے ایک ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا۔ ان کی طبیعت اب بہتر بتائی جا رہی ہے۔دلیپ کمار کی اہلیہ اور اپنے دور کی مقبول اداکارہ سائرہ بانو نے ‘شہنشاہ جذبات‘ کی موت کی افواہوں کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ 98 سالہ اداکار دو تین دنوں میں اپنے گھر واپس لوٹ آئیں گے۔ انہوں نے دلیپ کمار کے مداحوں سے اپیل کی کہ واٹس ایپ پر پھیلائی جانے والی افواہوں پر یقین نہ کریں۔ دلیپ کمار کے آفیشیل ٹوئٹر اکاؤنٹ سے سائرہ بانو نے ٹوئٹ کر کے کہا”صاحب کی حالت مستحکم ہے۔ آپ نے ان کی صحت کے لیے دل سے جو دعائیں کی ہیں ان کے لیے شکریہ۔ ڈاکٹروں کے مطابق وہ دو تین دن میں گھر لوٹ جائیں گے۔ انشا اللہ۔”

یوسف خان عرف دلیپ کمار کو سانس لینے میں شکایت کے بعد اتوار کی صبح ممبئی کے ہندوجا ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا، جہاں انہیں آکسیجن سپورٹ دیا جا رہی ہے۔ ہسپتال میں داخل کرائے جانے کے بعد سے ہی سوشل میڈیا پر شہرہ آفاق اداکار دلیپ کمار کی صحت کے حوالے سے طرح طرح کی افواہیں گردش کرنے لگیں۔

دلیپ کمار کا علاج کرنے والے ڈاکٹر جلیل پارکر نے ایک ٹوئٹ کر کے بتایا کہ ”وہ مستحکم ہیں۔ ان کے کئی ٹیسٹ کرائے گئے ہیں، جن کے نتائج کا انتظار کیا جا رہا ہے۔” اس سے قبل دلیپ کمار کے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے اتوار کے روز ایک ٹوئٹ کی گئی تھی کہ دلیپ کمار کو معمول کی طبی جانچ کے لیے ہسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ ڈاکٹروں کی ایک ٹیم ان کا علاج کر رہی ہے،”ان کی صحت کے لیے دعا کریں۔”اٹھانوے سالہ اداکار کو گزشتہ ماہ بھی ہسپتال میں داخل کرایا گیا تھا اور دو دن کے بعد انہیں رخصت دے دی گئی تھی۔

دلیپ کمار کو ہسپتال میں داخل کرائے جانے کی خبر پھیلتے ہی ہر طرح دعاؤں کا سلسلہ شروع ہو گیا۔معروف بھارتی اداکار دھرمیندر نے بھی ان کی صحت کے لیے دعا کرتے ہوئے مداحوں سے ان کی جلد صحت یابی کے لیے دعائیں کرنے کی اپیل کی۔پچاسی سالہ دھرمیندر نے ایک ٹوئٹ میں دلیپ کمار اور سائرہ بانوکے ساتھ پرانی تصویر شیئر کرتے ہو ئے لکھا،”دوستو، دلیپ صاحب ایک نیک انسان ہیں۔ ایک عظیم فنکار کے لیے آپ کی روح سے اٹھی دعائیں ضرور قبول ہوں گی۔جی جان سے آپ سب کا شکریہ۔”دھرمیندر نے اس سے قبل اتوار کے روز بھی ایک ٹوئٹ میں لکھا تھا”مالک سے دعا کیجئے میرے پیارے بھائی…ہمارے یوسف صاحب جلد صحت یاب ہو جائیں۔”

دلیپ کمار کی عیادت کے لیے سیاسی رہنماؤں کے ہسپتال پہنچنے کا سلسلہ بھی شروع ہو گیا ہے۔نیشنلسٹ کانگریس پارٹی کے صدر، مہاراشٹر کے سابق وزیر اعلی اور بھارت کے سابق وزیر دفاع شرد پوار نے ہسپتال جا کر دلیپ کمار کی خیریت دریافت کی۔ بعد میں ایک ٹوئٹ کے ذریعہ انہوں نے بتایا، ”شہرہ آفاق اداکار دلیپ کمار سے ہندوجا ہسپتال میں ملاقات کی اور ان کی صحت اور علاج کے متعلق معلومات حاصل کیں۔ میں ان کی جلد صحت یابی اور صحت کی دعا کرتا ہوں۔”

بھارتی فلموں کے شہرہ آفاق اداکار دلیپ کمار کا اصل نام یوسف خان ہے۔وہ پشاور کے بازار قصہ خوانی میں سن 1922 میں پیدا ہوئے تھے۔دلیپ کمارنے بالی ووڈ میں اپنے فلمی کیریئر کا آغاز 1944ء میں فلم ‘جوار بھاٹا‘ سے کیا۔انہوں نے درجنوں ہٹ فلموں میں اداکاری کی جن میں’کوہ نور‘، ‘مغل اعظم‘، ‘دیو داس‘، ‘نیا دور‘، ‘رام اور شیام‘ وغیرہ شامل ہیں۔بڑے پردے پر ان کی آخری فلم 1998میں ‘قلعہ‘ تھی۔دلیپ کمار کو سن 2015میں بھارت کے دوسرے سب سے بڑے سویلین اعزاز’پدم وبھوشن‘ اور 1994میں فلموں کے سب سے بڑے ایوارڈ ‘دادا صاحب پھالکے ایوارڈ‘ سے نوازا گیا تھا۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں