سبی کے سالانہ تاریخی میلہ کو کسی بھی صورت ملتوی ہونے نہیں دیا جائے گا،بلوچستان عوامی پارٹی

سبی:سبی کے سالانہ تاریخی میلہ کو کسی بھی صورت ملتوی ہونے نہیں دیا جائے گا سبی میلہ کو حسب روایت شایان شان طریقے سے منایا جائے صوبائی حکومت نے اگر سبی میلہ کے تاریخ کا اعلان نہیں کیا تو سندھ بلوچستان قومی شاہراہ کو بلاک کر کے شدید احتجاج کریں گے ان خیالات کا اظہار بلوچستان عوامی پارٹی کے مرکزی رہنماء و ممتاز قبائلی و سیاسی رہنما میر فرید رئیسانی نے اپنے جاری بیان میں کہا میر فرید رئیسانی نے کہا کہ بلوچستان حکومت اور بیورو کریٹ نے سبی کا تاریخی میلہ اگر کینسل کیا تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہونگے انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سیاسی جلسوں کے انعقاد اور لاکھوں افراد کی شرکت کے وقت کورونا کہاں جاتا ہے جب بھی سبی میلہ کا وقت قریب آتا ہے تو بیورو کریٹ اور صوبائی کورونا کا جواز بنا کر سبی میلہ کو کینسل کردیتے ہیں انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے عوام اور مال دار سارا سال اس میلے کا انتظار کرتے ہیں اور میلہ کے انعقاد سے نہ صرف لوگوں کو تفریح کے مواقع فراہم ہوتے ہیں بلکہ بلوچستان سمیت سبی کی معیشت پر اچھے اثرات مرتب ہوتے ہیں انہوں نے کہا کہ شنیڈ میں آیا ہے کہ اس بار بھی صوبائی حکومت سبی میلہ کو منانے کا ادارہ نہیں رکھتے ہیں جس کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ اگر اس بیورو کریٹ اور صوبائی حکومت نے کورونا وائرس کا جواز بناکر سبی میلہ کو منسوخ کیا ہے تو سندھ بلوچستان قومی شاہراہ کو کولپور سے لیکر سیم شاخ تک بند کرکے شدید احتجاج کریں گے اور کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں انہوں نے صوبائی حکومت اور چیف سیکرٹری بلوچستان سے پر زور مطالبہ کیا ہے کہ سبی میلے کی تاریخ کا اعلان کیا جائے تاکہ عوام میں پائی جانے والی بے چینی کا خاتمہ ہوسکے

اپنا تبصرہ بھیجیں