تفتان، قرنطینہ میں رکھے گئے زائرین کی تعداد2ہزار سے تجاوز کر گئی

تفتان: پاک ایران بارڈر پر 12 روز بھی تجارت بند رہی، اب تک قرنطینہ میں رکھنے گئے زائرین کی تعداد 2238 ہوگئی ہے۔ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر کے مطابق ایران سیآنے والے 3 ہزار سے زائدافراد کی اسکریننگ کی گئی ہے۔لیویز حکام نے بتایاکہ گزشتہ روز ایران سے 353 افراد آئے تھے جن میں سے 253 کو قرنطینہ میں رکھا گیا ہے جس کے بعد پاکستان ہاؤس میں قرنطینہ میں رکھے گئے زائرین کی تعداد2238 ہوگئی ہے۔دوسری جانب کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے چمن کے مقام پر پاک افغان بارڈر تیسرے روز بھی بند رہا جس کے باعث پاک افغان تجارت معطل ہونے سے افغانستان جانے والے میوہ جات کے ٹرک مقامی کولنگ اسٹورز منتقل کردئیے گئے ہیں۔کسٹم حکام کے مطابق مال بردارگاڑیاں، نیٹوآئل ٹینکرز اور ٹرانزٹ ٹریڈکنٹینرزکسٹم ہاؤس دیگریارڈ میں موجود ہے۔محکمہ صحت کے حکام کے مطابق ایک ہفتے میں پاک افغان بارڈر پر 10 ہزار افراد کی اسکریننگ کی گئی جن میں کوئی کورونا کا کوئی مریض نہیں پایا گیا۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں