سینیٹ چیف جسٹس کے بیان پر کشیدگی اٹارنی جنرل کی وضاحت پر ہنگامہ


اسلام آباد(آئی این پی)اٹارنی جنرل کاوضاحتی خط سینیٹ پہنچ گیا ،وزیر قانون سینیٹر اعظم نذیر تارڑ نے اٹارنی جنرل کے خط سے ایوان کو آگاہ کیا تو حکومتی اتحادی سینیٹرمیاں رضاربانی نے اٹارنی جنرل کے خط پر شدید اعتراض کرتے ہوئے مستردکرتے ہوئے کہاکہ اٹارنی جنرل ایوان کی کارروائی کوکنٹرول نہیں کرسکتاچیف جسٹس کے بیان کی وضاحت جاری کرنے ہے تو رجسٹرارجاری کرئے اٹارنی جنرل جس طرح عدلیہ کا دفاع کررہے ہیں عدالت میں پارلیمنٹ کا بھی دفاع کریں ۔قائدحزب اختلاف سینیٹرشہزاد وسیم نے کہاکہ چیف جسٹس نے یہ بھی کہاہے کہ پارلیمنٹ نامکمل ہے این آراو ٹو کی بھی بات کی ہے لاہور ہائی کورٹ نے الیکشن کرانے کابھی حکم دیاہے اس پر بھی بات کریں میٹھامیٹھاہپ ہپ کڑواکڑواتھوتھو نہیں چلے گا،قائدحزب اختلاف اور وزیر قانون میں جواب الجواب شروع ہونے پر چیئرمین سینیٹ نے سینیٹ کا اجلا س غیرمعینہ مدت تک ملتوی کردیا ،اجلاس کی کارروائی صر ف17منٹ چل سکی نہ وقفہ سوالات اور نہ ہی ایجنڈا لیاجاسکا۔منگل کوسینیٹ کااجلاس چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہاوس میں ہوا۔ اجلاس شروع ہوا تو وزیر قانون و انصاف سینیٹراعظم نذیر تارڑ نے کہاکہ اٹارنی جنرل نے مجھے خط لکھا ہے اور آپ کو بھی لکھاہے اس حوالے سے بات کرناچاہتاہوں اٹارنی جنرل نے لکھاہے کہ وہ عدالت میں موجود تھے سوشل میڈیا میں جو بات ہوئی کہ چیف جسٹس نے کہاہے کہ صرف ایک ہی وزیراعظم ایماندار تھے یہ بات غلط ہے ۔سوشل میڈیا رپورٹس درست نہیں تھیں ۔جج نے وہ الفاظ ادا نہیں کئے جو میڈیا میں رپورٹ ہوئے ہیں اس لیے حقائق کو درست کیا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں