چین میں پھنسے پاکستانیوں کو واپس نہ لانے کا فیصلہ صحیح تھا، زلفی بخاری

اسلام آباد، وزیر اعظم کیمعاون خصوصی زلفی بخاری کا کہنا ہے کہ چین میں پھنسے پاکستانیوں کوواپس نہ لانیکافیصلہ صحیح تھا، سعودی عرب میں پھنسے پاکستانیوں کو 3 سے5دن میں وطن واپس لایا جائیگا۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری کی اوورسیزپاکستانیوں کو آن لائن بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ڈبلیوایچ او نے پاکستان کے کرونا سے متعلق اقدامات کی تعریف کی، وزیراعظم کی ہدایت ہے کرونا متاثرین کے مسائل حل کئے جائیں۔ چین میں پھنسے پاکستانیوں کوواپس نہ لانیکافیصلہ صحیح تھا، چین میں پھنسے پاکستانیوں کی صورتحال روزانہ مانیٹرکی جاتی ہے، جمعرات کو6اشیاء چین میں پھنسے 1300طالبعلموں کوپہنچائی جائیں گی۔معاون خصوصی نے کہا کہ سعودی عرب میں پھنسے پاکستانیوں کے لئے بھی فکرمندہیں، 3 سے5دن میں سعودی عرب میں پھنسے پاکستانیوں کولایاجائیگاجبکہ دیگر ممالک میں موجود پاکستانی ہیلتھ اتھارٹیز سے تعاون کریں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ مشکل صورت میں وزارت اوورسیز کے سوشل میڈیا یا فون نمبر پر رابطہ کر سکتے ہیں۔گذشتہ روز وزارت اوورسیز کی جانب سے چین کیشہرووہان میں پھنسے 1300 پاکستانی طلباکیلئے 15دن کاامدادی سامان بھیجا گیا، امدادی سامان میں طلبا کیلئے کھانے پینے اور دیگرضروری اشیا شامل تھیں۔زلفی بخاری کا کہنا تھا کہ بیرون ملک پا کستان کی ہرقسم کی مدد ہما ری اولین ترجیح ہے، کروناوائرس سے پوری دنیا متاثر ہورہی ہے، طلبا کے والدین سے وعدہ کیا ہے بچوں کاخیال رکھا جائیگا، اپنے شہریوں سے متعلق چینی حکومت کے ساتھ رابطے میں ہیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں