ماضی میں کوئٹہ سمیت بلوچستان بدامنی کا شکار تھا،عبدالخالق ہزارہ

کوئٹہ:بلوچستا ن کے وزیر کھیل وامور نوجوانوں عبدالخالق ہزارہ نے کہا کہ ماضی میں کوئٹہ سمیت بلوچستان بدامنی کا شکار تھا ہماری حکومت نے نوجوانوں کو تعمیری سرگرمیوں میں مصروف کرنے کیلئے اسپورٹس کمپلیکس بنانے کا فیصلہ کیاآج صوبے کے تمام اضلاع میں اسپورٹس کمپلیکس بنانے جارہے ہیں ہماری حکومت صنفی برابری کے اصولوں پر کاربندہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے آل پاکستان وزیراعلی بلوچستان ٹی 20وومن لیگ میں شریک ٹیموں کے اعزاز میں دئیے گئے عشائیہ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا تقریب میں ٹورنامنٹ صوبائی وزرا،خواتین کھلاڑیوں اور کوئٹہ گلیڈی ایٹر کے اونر ندیم عمر نے شرکت کی صوبائی وزیر کھیل خالق ہزارہ نے کہا کہ بلوچستان کے بارے میں عام تاثر یہ ہے کہ یہاں خواتین کو برابری کی بنیاد پر مواقع نہیں ملتے ہیں ہماری کوشش ہے کہ صوبے میں صنفی برابری قائم کریں ہماری حکومت نے خواتین کا ٹی 20ٹورنامنٹ کرایا،خالق ہزارہ نے کہا کہ کورونا کے بعد سب سے زیادہ اسپورٹس ایونٹ بلوچستان میں ہوئے،اس موقع پر کوئٹہ گلیڈی ایٹر اونر ندیم عمر کا کہنا تھا کہ بلوچستان میں خواتین کا اتنا اچھا ٹورنامنٹ منعقد کرانے پر صوبائی حکومت قابل ستائش ہے انہوں نے کہا کہ کوئٹہ میں فلڈلائٹس سمیت دیگر سہولیات کی فراہمی کی ضرورت ہے جسکی طرف پی سی بی کو توجہ دینا ہوگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں