ادارے کی بنیادی ترجیحات میں انفرا سٹرکچر اور حکومت پاکستان کو مختلف شعبوں میں تعاون شامل ہے،مریسیہ زپاسنک

کوئٹہ:اقوام متحدہ کے ادارہ برائے پراجیکٹ سروسز (یو این او پی ایس)پاکستان میں موسمی تبدیلی، صحت ومعاشی ترقی اور پانی اور حفظان صحت سمیت دیگر شعبوں میں مدد جاری رکھے ہوئے ہیں۔ادارے کی بنیادی ترجیحات میں انفرا سٹرکچر اور حکومت پاکستان کو مختلف شعبوں میں تعاون شامل ہے جس میں عوام الناس کے زیر استعمال عمارات اور بنیادی ڈھانچے،سول انتظامیہ،پولیس اور دیگر منصوبہ جات شامل ہیں۔اقوام متحدہ کے ادارہ برائے پراجیکٹ سروسزبلوچستان میں عوامی سہولیات اور دیگر شعبہ جات میں تعاون کا آغاز کر رہی ہیں اور یہی وجہ ہے کہ مجھ سمیت ادارے کے عہدے داران بلوچستان کے دورے کر رہے ہیں ان خیالات کا اظہار اقوام متحدہ کے ادارہ برائے پراجیکٹ سروسز (یو این او پی ایس)کی پاکستان میں سربراہ مریسیہ زپاسنک نے وفد کے ہمراہ دورہ بیوٹمز پر طلباء اور سنیئر عہدہ داران سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔وائس چانسلر بیوٹمز احمد فاروق بازئی نے اقوام متحدہ کے ادارہ برائے پراجیکٹ سروسز (یو این او پی ایس)کی پاکستان میں سربراہ مریسیہ زپاسنک کاوفد کے ہمراہ بیوٹمز پہنچنے پر استقبال کیا اوربیوٹمز کے متعلق جامع بریفینگ دی،وفد نے بیوٹمز کے مختلف حصوں کا دورہ کیا جبکہ طلباء، اساتذہ اور بیوٹمز کے دیگر عہدے داران سے ملاقات کی۔سینئر حکام اور یونیورسٹی کے سینئر پروفیسرزکے ساتھ ملاقات میں اقوام متحدہ کے ادارہ برائے پراجیکٹ سروسز (یو این او پی ایس)کی پاکستان میں سربراہ مریسیہ زپاسنک نے کہا کہ میرے لئے انتہائی فخر اور اعزاز ہے کہ مجھے بیوٹمز جیسی تیزی سے ترقی کرتی ہوئی یونیورسٹی آنے کا موقع ملا اور میں بیوٹمز کی جامع حکمت عملی اور مستقبل کے بارے میں انتہائی پر امید ہوں ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں نوجوان حیران کن حد تک قابل صلاحیت ہیں چونکہ پاکستان کی آبادی کا بڑا حصہ نوجوانوں پر مشتمل ہے تو یہ اندازہ لگانا مشکل نہیں کہ پاکستان کا مستقبل بہترین ہوگا۔بیوٹمز اور ان کے اساتذہ بنیادی و معیاری تعلیم کی فراہمی کے ساتھ ساتھ معاشرے کی بہتری اور ترقی میں علمی تبدیلیاں رونماں کر رہے ہیں جامعہ کا مرد وار خواتین اساتذہ اور طلباء کے لئے ہم آہنگ اور ساز گار ماحول قابل تعریف ہے۔ساتذہ اور تعلیمی حلقوں سے ملاقات میں ہمیں بلوچستان کے بنیادی مسائل اور ان کے حل کے لئے اپنا حصہ ڈالنے کے منصوبہ جات مرتب کرنے میں مدد ملے کی۔ وائس چانسلر بیوٹمز احمد فاروق بازئی نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بیوٹمز اقوام متحدہ کے دیر پا ترقیاتی اہداف ایس ڈی جی 8کا مرکز بھی ہے۔مجھے اس بات غماز ہے کہ بیوٹمز ہر سطح پر معاشرے میں علمی اور تعلیمی خدمات خوش اسلوبی سے سر انجام دے رہا ہے۔ نو عمر طلباء کو تعلیم کے زیور سے آراستہ کرنے سے لیکر روز گار کی تلاش اور معاشرے کا ایک ذمہ دار فرد بنانے تک جامعہ اپنا کردار ادا کر رہی ہے۔نئی جہتوں،معاشرتی مسائل کا ادارک اور ان کے حل و نقصانات سے بچاؤ سمیت اقوام متحدہ اور دیگر اداروں کو تحقیقی علوم و معلومات سمیت بلوچستان کے مثبت اور پر کشش پہلوؤں سے آگاہ رکھے ہوئے ہیں جس سے معاشرتی مسائل کے حل میں خاطر خواہ مدد مل رہی ہیں۔ وائس چانسلر بیوٹمز احمد فاروق بازئی نے اقوام متحدہ کے ادارہ برائے پراجیکٹ سروسز (یو این او پی ایس)کی پاکستان میں سربراہ مریسیہ زپاسنک کا بیوٹمز آمد پر شکریہ ادا کیااور بیوٹمز کی جانب سے یادگاری شیلڈ پیش کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں