اوستہ محمد میں ٹریفک کا نظام درہم برہم، عوام کو مشکلات کا سامنا

اوستہ محمد(مانیٹرنگ ڈیسک)اوستہ محمد کو ضلع کا درجہ ملنے کے بعد بھی ٹریفک کا نظام بہتر نہ ہو سکا۔شہر کے مختلف شاہراہوں پر ٹریفک جام رہنا روز کا معمول بن گیا۔ایمرجنسی میں مریضوں اور شہریوں کو آمدروفت میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔تفصیلات کے مطابق بلوچستان کے ضلع اوستہ محمد میں مسلسل ٹریفک کا نظام درہم برہم.شہر کی مختلف شاہراہوں شبیر چوک،گنداخہ اڈہ،جیکب آباد پھاٹک اور علی آباد روڈ پر ٹریفک کا جام رہنا روز کا معمول بن چکا ہے۔ٹریفک پولیس ٹریفک کا نظام بہتر کرنے میں مکمل طور پر ناکام نظر آ رہی ہے۔اس موقع پر شہریوں کا کہنہ تھا کہ اوستہ محمد میں ٹریفک جام رہنا روز کا معمول بن چکا ہے۔ایمرجنسی کی صورت میں مریضوں کو اور آمدورفت میں شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔شہریوں نے مذید کہا کہ اوستہ محمد میں کوئی ٹریفک پلاننگ نہیں ہے۔جس کا جہاں دل کرتا ہے گاڑیاں کھڑی کر کے چلے جاتے ہیں۔دوسری جانب ناجائز تجاوزات نے بھی ٹریفک کو بری طرح متاثر کیا ہوا ہے۔جناح روڈ، گنداخہ اڈہ،شبیر چوک سمیت مختلف شاہراہوں پر دکانداروں نے اپنے سامان باہر رکھ کر ڈسپلے سینٹر بنایا ہوا ہے جس کی وجہ سے شہریوں کو آمدورفت میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔شہریوں نے کمشنر نصیرآباد ڈویڑن، ڈی آئی جی پولیس نصیرآباد ڈویڑن،ڈپٹی کمشنر اوستہ محمد اور ایس پی اوستہ محمد سے مطالبہ کیا کہ اوستہ محمد میں ٹریفک کا نظام بہتر کرنے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر بہتر اقدامات اٹھائے جائیں تاکہ شہریوں کی مشکلات میں کمی آ سکے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں