کوئٹہ، گیس چوری کے خلاف کریک ڈاؤن جاری، 770 غیر قانونی کنکشن منقطع

کوئٹہ(این این آئی)سوئی سدرن نے اپنے فرنچائز صوبوں سندھ اور بلوچستان کے رہائشی علاقوں میں چھاپوں کے ذریعے گیس چوری کے واقعات کے خلاف زیرو ٹالرنس کا مظاہرہ جاری رکھا ہوا ہے تازہ کارروائیوں میں کمپنی کی تھیفٹ کنٹرول ٹیموں نے مختلف شہروں اور قصبوں میں تقریبًا 770 غیر قانونی گھریلو کنکشن ہٹا دیے تجارتی مقاصد کے لیے براہ راست لائنوں سے گیس چوری کرنے میں ملوث افراد کے خلاف بھی ایف آئی آر درج کر دی گئیں۔کراچی میں کسٹمر ریلیشنز ڈپارٹمنٹ کی تھیفٹ کنٹرول ٹیموں نے ایف بی ایریا اور لیاقت آباد میں 570 غیر قانونی گھریلو زیر زمین اور اوور ہیڈ کنکشنز ہٹا دیے .چوری کے زیادہ تر کیسز میں رہائشیوں نے غیر قانونی طور پر گیس کنکشنز بڑھائے ہوئے تھے، جنہیں چھاپوں کے دوران ختم کر دیا گیا. مزید غیر مجاز کنکشنز کے استعمال کو روکنے کے لئے سوئی سدرن کی ٹیموں نے سروس لائنوں کو بھی ختم کردیا. نارتھ کراچی میں ایک بیکری فیکٹری کے مالک کے خلاف ایف آئی آر درج کرلی گئی جو سیکیورٹی سروسز اینڈ کاؤنٹر تھیفٹ آپریشنز (ایس ایس اینڈ سی جی ٹی او) اور سوئی سدرن پولیس کے چھاپے کے دوران سروس لائن کے ذریعے براہ راست ہیوی جنریٹر استعمال کرتے ہوئے پکڑا گیا تھا. چوری سے ہونے والے نقصانات کی وصولی کے لئے کے دعوے دائر کیے جا رہے ہیں.سوئی سدرن کی تھیفٹ کنٹرول ٹیموں نے نواب شاہ اور لاڑکانہ کے علاقوں میں زیر زمین اور اوور ہیڈ چوری میں ملوث گھروں پر بھی چھاپے مارے اور 25 غیر قانونی گھریلو کنکشن ہٹائے .چوری میں استعمال ہونے والے کلمپ اور ربڑ کے پائپوں کو چھاپہ مار ٹیموں نے ہٹا دیا. چوری کے دعوے دائر کیے جا رہے ہیں. ایس ایس اور سی جی ٹی او کے چھاپے کے بعد گیس چوری کے ملزمان کے خلاف بھی ایف آئی آر درج کرلی گئی جو نواب شاہ میں اپنے ہوٹل کا کاروبار چلانے کے لئے براہ راست گیس چوری کرتے ہوئے پکڑے گئے تھے بالائی اور زیریں بلوچستان میں بھی گیس چوری کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن جاری ہے. کوئٹہ، پشین، قلات اور مستونگ کے علاقوں میں 175 اوور ہیڈ اور زیر زمین غیر قانونی گیس کنکشن ہٹائے گئے. کچھ کیسز میں جعلی میٹر بھی ملے جن کے کنکشن منقطع کر دیے گئے. اس کے علاوہ گیس چوری میں استعمال ہونے والے کلمپ اور ربڑ کے پائپوں کو بھی تھیفٹ کنٹرول ٹیموں نے ہٹا کر ضبط کر لیا .چوری کے دعوے بھی دائر کیے جا رہے ہیں.مذکورہ بالا شہروں کے رہائشی علاقوں میں بار بار چوری کے واقعات کی روک تھام کے لئے گیس چوری سے متاثرہ علاقوں کی کڑی نگرانی اور مانیٹرنگ کو یقینی بنایا جائے گا .سوئی سدرن باقاعدگی سے چھاپوں اور بھرپور کارروائیوں کے ذریعے گیس چوری کے خطرے پر قابو پانے پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہے. گیس چوری سوئی سدرن کی جانب سے لائن لاسز یا یو ایف جی کی ایک بڑی وجہ ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں