نوشکی بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاج، مختلف مقامات پرشاہراہ ٹریفک کیلئے بند

نوشکی (مانیٹرنگ ڈیسک)نوشکی نامہ نگار زمیندار ایکشن کمیٹی کے کال پر بجلی کی 21 گھنٹے لوڈشیڈنگ کے خلاف تین مختلف مقامات پر قومی شاہراہ صبح سے ٹریفک کے لیے بند چھ گھنٹے بجلی شیڈول بحال کرنے کا مطالبہنوشکی زمیندار ایکشن کمیٹی کے ضلعی صدر میر محمد اعظم ماندائی سی سی ممبر میر خورشید جمالدینی کے سربراہی میں زمیندار ایکشن کمیٹی کی کال پر دیہی فیڈرز میں روزانہ اکیس گھنٹے کے طویل ترین لوڈشیڈنگ کے خلاف پہیہ جام ہڑتال زمینداروں نے کیشنگی ۔بھٹو اور مل کے مقام پر این چالیس کوئٹہ تفتان شاہراہ کو ہرقسم کی ٹریفک کے لیے بند کردیا ہیں زمیندار رئنماوں میر محمد اعظم ماندائی ۔میر خورشید جمالدینی ۔مولانا عبدالصمد مینگل حاجی رسول بخش مینگل حاجی میر سلطان محمد جمالدینی حاجی نعیم جان بادینی ۔کے ڈی بادینی ۔میر بالاچ خان جمالدینی میر ثناء الله جمالدینی حاجی ملک محمد عثمان جمالدینی حاجی منظور احمد مینگل مولانا زکریا عادل فاروق بلوچ حاجی نور احمد مینگل و دیگر نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ صوبائی حکومت نے ایک ماہ کے اندر اندر زرعی ٹیوب ویلز کو سولر سسٹم پر شفٹ کرنے کا معاہدہ کیا اورجب تک زرعی ٹیوب ویلز سولر پر شفٹ نہیں ہوں گے تو روزانہ چھ گھنٹے بجلی فراہم کی جائے گی مگر کیسکو حکام نے عید کے مقدس دنوں میں بجلی لوڈشیڈنگ میں غیر اعلانیہ طور پر اضافہ کرکے زمینداروں اور دیہی فیڈرز کے عام صارفین کو عذاب میں مبتلا کردیا زرعی فصلات پانی نہ ملنے کی وجہ سے اس قیامت خیز گرمی میں تباہ ہورہے ہیں جس سےزمینداروں کو کروڑوں کا نقصان ہوگا اس کے علاوہ دیہی علاقوں میں گھروں میں پینے کے لیے پانی دستیاب نہیں نظام زندگی مکمل طور پر مفلوج ہیں زمیندار مجبور ہوکر سڑکوں پر نکلے ہیں پہیہ جام ہڑتال غیر معینہ مدت تک کے لیے ہیں جب تک چھ گھنٹے بجلی فراہمی کی شیڈول جاری نہیں ہوگی قومی شاہراہ ہرقسم کی ٹریفک کے لیے بند رہے گی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں