کوئٹہ شہر میں 15 دسمبر سے ایک مرتبہ پھر خصوصی صفائی مہم کا سلسلہ شروع ہورہا ہے،ڈپٹی کمشنر کوئٹہ

کوئٹہ:ڈپٹی کمشنر کوئٹہ و ایڈمنسٹریٹر عرفان نواز میمن نے کہا ہے کہ کوئٹہ شہر میں روزانہ 12لاکھ ٹن کچرہ جمع ہوتاہے میٹروپولیٹن کارپوریشن کے پاس 7سے 8سوٹن کچرہ اٹھانے کی گنجائش ہے کوئٹہ شہر میں 15 دسمبر سے ایک مرتبہ پھر خصوصی صفائی مہم کا سلسلہ شروع ہورہا ہے جو رات کو بھی جاری رہے گی،میٹروپولیٹن کی کوئٹہ شہر میں 14 پارکنگ رجسٹرڈ ہیں جن میں 6 پارکنگ ٹھیکے پردی گئی ہیں پرائیویٹ پارکنگ مالکان جلد کارپوریشن سے این او سی لیں بصورت دیگر انہیں پارکنگ کی اجازت نہیں ہوگی،پارکنگ کی مدمیں اضافی رقوم لینے والے 15 سے زائد ٹھیکیداروں کے خلاف کارروائی کی جارہی ہے، شہر کی 29 شاہراہوں پر تعمیر ہونے والی عمارتوں کے نقشے چیک کئے جائیں گے۔یہ بات انہوں نے بدھ کو چیف آفیسر میٹروپولیٹن کارپوریشن عطاء اللہ بلوچ،چیف سینی ٹری آفیسر انور لہڑی اور دیگر کے ہمراہ کوئٹہ پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی۔عرفان نواز میمن نے کہاکہ کوئٹہ شہر میں پرنے کچرے کو اٹھانے کیلئے 13دسمبر سے 29دسمبر تک رات کے اوقات میں کوئٹہ شہر کے مختلف علاقوں سے کچرہ اٹھاکر ٹھکانے لگایا جائے گا تاکہ شہرکو صاف ستھرا بنایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ کوئٹہ شہر ہم سب کا مشترکہ گھر ہے جسے صاف ستھرا رکھنا ہم سب کی ذمہ داری ہے شہریوں کو چاہئے کہ وہ جگہ جگہ کچرہ پھینکے کی بجائے مخصوص جگہوں پر کچرہ جمع کرائیں تاکہ کوئٹہ میٹروپولیٹن کارپوریشن کا عملہ بروقت اس کچرے کو ٹھکانے لگاسکے۔ انہوں نے کہا کہ کوئٹہ شہر میں روزانہ 12لاکھ ٹن کچرہ جمع ہوتا ہے کارپوریشن کے پاس 7سے 8سو ٹن کچرہ اٹھانے کی گنجائش موجود ہے ہماری کوشش ہوگی کہ شہر کی صفائی کیلئے تمام دستیاب وسائل کوبروئے کارلایا جائے۔ انہوں نے کہاکہ کوئٹہ میٹروپولیٹن کے پاس کوئٹہ میں صفائی کیلئے 680ریگولرجبکہ 1400کنٹریکٹ ملازمین ہیں جو مختلف شفٹوں میں کام کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کوئٹہ میٹروپولیٹن کارپوریشن کے ملازمین کو 2ماہ کی تنخواہیں ادا نہیں کی گئی تھیں جس کی وجہ سے ملازمین ہڑتال پر تھے جس سے شہر میں صفائی کی صورتحال خراب ہوئی تاہم اب ملازمین کو 1ماہ کی تنخؤاہ ادا کردی گئی ہے جبکہ دوسرے ماہ کی تنخواہ بھی ایک ہفتے کے دوران ادا کردی جائے گی اور اب ملازمین کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ صفائی کی صورتحال کو بہتر بنانے میں اپنا کردارادا کریں۔انہوں نے کہا کہ کوئٹہ شہرکی مختلف شاہراہوں کے دونوں اطراف واقع چھوٹی نالیوں اور بڑے نالوں کی صفائی کی خصوصی مہم بھی شروع کی جارہی ہے تاکہ بارشو ں کے دوران سوریج کاگندہ پانی سڑکوں پرنہ آئے۔عرفان نواز میمن نے کہا کہ کوئٹہ شہر میں میٹروپولیٹن کی 14 پارکنگ رجسٹرڈ ہیں جن میں 6 پارکنگ ٹھیکے پر دی گئی ہیں 7 پارکنگ میں سے 3 پر کورٹ سے اسٹے ہے تاہم 4 پارکنگ کل سے ٹینڈر کرائیں گے جب تک ٹینڈر نہیں ہوتے تب تک شہر کی 7 پارکنگ میں کوئی فیس نہیں لی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ پارکنگ کی مد میں اضافی رقوم لینے والے 15 سے زائد ٹھیکیداروں کے خلاف کارروائی کی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ کوئٹہ شہر میں قائم غیرقانونی پارکنگ کے خلاف بھی کارروائیاں جاری ہیں پرائیویٹ پارکنگ کے مالکان جلد میٹروپولیٹن کارپوریشن سے این او سی لیں بصورت دیگرانکی پارکنگ بند کردی جائیں گی۔ انہوں نے کہاکہ کوئٹہ شہر کی 29اہم شاہراہوں پر تعمیر ہونیوالے عمارتوں کے نقشے چیک کئے جائیں گے اور جن مالکان نے کارپوریشن سے نقشے پاس نہیں کروائے انہیں بند کردیا جبتک کارپوریشن سے نقشے پاس نہیں کرائے جائیں گے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ کوئٹہ میں پارکنگ پلازے کی تعمیر مکمل ہوچکی ہے اور جلد ہی پارکنگ پلازے کا ٹینڈر کرکے اسے اپرکنگ کیلئے کھول دیا جائے گا۔ایک سوال کے جواب میں عرفان نواز میمن نے بتایا کہ یٹ روڈ،فاطمہ جناح روڈ پرٹریفک کی روانی میں خلل ڈالنے والے متعدد شورومز کو سیل کردیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں