ڈاکٹرز پر تشدد، بلوچستان میں حکمرانی بیورو کریسی کی ہے،بی این پی

کوئٹہ، بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی بیان میں ینگ ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکس پر حکومت اور انتظامیہ کی جانب سے تشدد کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ دنیا کورونا وائرس سے صوبائی حکومت ڈاکٹرز سے جنگ لڑ رہی ہے ڈاکٹرزا ور پیرا میڈیکس کی زندگیوں کو بلوچستان میں خطرات لاحق ہیں ڈاکٹر نے حفاظتی کٹس اور دیگر لوازمات کے حصول کی خاطر احتجاج کیا غیر جمہوری روش اپنا کر صوبائی حکومت انتظامیہ نے ثابت کر دیا ہے کہ اب شعبہ طب سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹرز کو بھی پرامن احتجاج کی اجازت نہیں ڈاکٹرز پر تشدد اور ظلم و ناانصافی قابل مذمت ہے صوبائی نااہل حکومت بیورو کریسی اور انتظامیہ کے سامنے بے بس ہے آج بلوچستان میں حکمرانی بیورو کریسی کی ہے جو بلوچ دشمن اقدمات سے پیچھے دکھائی نہیں دے رہے ہیں ڈاکٹرز پر ہونے والا تشدد‘ ناانصافیوں کے حوالے سے فوری طور پر تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دی جائے صوبائی حکومت کے ارباب اختیار ہوں یا بیورو کریسی ان کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے دنیا کورونا وائرس سے اور صوبائی حکومت قوم کے مسیحاؤں سے لڑ رہی ہے اگر ڈاکٹرز نے اپنے حقوق کیلئے آواز بلند کی تو انہیں تحمل و صبر سے سنا جاتا فوری طور پر ان کے اہم مسائل جن کا ان کی زندگی و صحت سے تعلق ہے انہیں فوری طور پر حل کرتے مگر یہاں پر تشدد‘ ظلم و زیادتیوں کا دور دورہ ہے نااہل صوبائی حکومت بلوچستان کے ہر طبقہ فکر کیلئے وبال جان بن چکی ہے انہیں اب تک یہ سمجھ نہیں کہ مسائل کو کیسے حل کیا جا سکتا ہے حکومت اخلاقی جواز بھی کھو رہی ہے فوری طور پر صوبائی حکمران مستعفی ہوں ان میں اتنی صلاحیت نہیں کہ بلوچستان کے ڈاکٹرز سمیت ہر طبقہ فکر کا سامنا کر سکیں اگر بلوچستان میں ابتدائی دنوں سے بہتر حکمت عملی اپناتے تو یقینا آج بلوچستان میں ہر طبقہ فکر اتنا پریشان نہ ہوتا۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply