میڈیکل طلباءکی سلیکشن میں بے ضابطگیوں کیخلاف بی ایس او شال زون کا احتجاج کا اعلان

بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن شال زون کے ترجمان نے جاری کردہ بیان میں کہا کہ میڈیکل کالجز میں داخلہ لینے کیلئے طلباءہزاروں کی تعداد میں انٹری ٹیسٹ دینے کے بعد کالجز میں میرٹ کی بنیاد پر سلیکٹ ہوتے ہیں جن کو بعد میں پی ایم سی طلباءکی رجسٹریشن کرتا ہے مگر بدقسمتی سے بلوچستان کے طلباءکیلئے صورت حال کچھ اور بنایا گیا ہے میرٹ کی بنیاد پر داخلہ ہونے کے باوجود بھی طلباءپر اسپیشل ٹیسٹ مثلت کیا جا رہا ہے جو نہ کہ پی ایم سی کے ایکٹ میں شامل ہے نہ ہی ماضی میں اسکی کوئی مثال ملتی ہے اسپیشل ٹیسٹ منعقد کرنا طلباءکے مستقبل کو داو¿ پر لگانے کے علاو¿ہ کچھ نہیں جس کے خلاف میڈیکل کالجز کے طلباءتقریباً ایک ماہ سے شال میں کیمپ لگا کر احتجاج میں بھیٹے ہیں۔ حکومت شدید سردی میں احتجاج کرنے والے طلباءکے جائز مطالبات تسلیم کرنا تو دور طلباءکے طرف توجہ ہی نہیں دی جارہی ہے جو کہ حکمرانوں کی بے بسی اور غیر سنجیدگی واضح بیان کر رہے ہیں۔ترجمان نے مزید کہا کہ حکمرانوں کی بے حسی اور پی ایم سی کی غلط پالیسیوں کے خلاف تمام طلباءتنظیموں اور میڈیکل کالجز کے طلباءکل 6 جنوری بروز جمعرات کو شال میں احتجاجی ریلی نکالی جائے گی اور مطالبات کے تسلیم ہونے تک احتجاج جاری رکھا جائے گا اور وقت کے ساتھ احتجاج کو مزید وسعت دی جائی گی۔ بی ایس او شال زون کے تمام ممبران کو احتجاج میں شرکت کرنے کی تاکید کرتی ہے اور ہر مقطبہ فکر حضرات سے گزارش کرتے ہیں کہ وہ اس احتجاج میں شریک ہوکر قومی جہد اور مستقبل کے معماروں کے مستقبل بچانے میں اپنا کردار ادا کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں