حکومت عوام کامعیارزندگی بہتر بنانے کیلئےخصوصی توجہ دےرہی ہے،اسدعمر

اسلام آباد : وزیر منصوبہ بندی و ترقی اسد عمر نے کہا ہے کہ حکومت عوام خصوصاً معاشرے کے پسماندہ طبقوں کے معیار زندگی کو بہتر بنانے کےلئے خصوصی توجہ دے رہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں کابینہ کے دوسرے ارکان کے ہمراہ احساس ون ونڈو آفس کا افتتاح کرتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ ہم پاکستان کو ریاست مدینہ کی طرز پر ایک فلاحی ریاست میں تبدیل کرنے کےلئے وزیراعظم عمران خان کے نصب العین کے مطابق آگے بڑھ رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ احساس ون ونڈو آفس کے افتتاح سے مستحق خاندانوں کو احساس سے متعلق تمام سہولتیں ایک چھت کے نیچے فراہم کرنے میں مدد ملے گی ۔ جس طرح سے احساس کے پروگرام بنائے گئے اسی طرح ایک ون ونڈو مرکز بنایا گیا، ماں کا کردار جب ریاست ادا کرتی ہے تو کیسا ہوتا ہے وہ یہاں آپکو نظر آئیگا،بچوں کی تعلیم، روزگار، صحت سمیت ہر پہلو یہاں آپ کو نظر آئیگا۔انہوں نے کہا کہ چھوٹے بچوں کیلئے وظیفہ بھی احساس پروگرام کےذریعے دیا جا رہا ہے،عمران خان حکومت نے اتنی اسکالر شپ بڑھا دی کہ بچوں کو پتہ بھی نہیں کہ کہاں کہاں اسکالر شپ ہیں۔

اسد عمر نے کہا کہ نشوو نما کا پروگرام اور بلاسود قرضے کا پروگرام بھی یہاں موجود ہے،راشن پروگرام کیلئے 37 سو یوٹیلیٹی اسٹورز پر 30 فیصد رعایت ملے گی،یکساں تعلیمی نظام بھی شفقت محمود کا ایک انقلابی قدم ہے۔وزیرتعلیم شفقت محمود نے کہا کہ احساس وظائف پروگرام کا دائرہ انٹر میڈیٹ کی سطح تک بڑھا دیا گیا ہےیہ ایک بڑا قدم ہے جس سے خصوصاً لڑکیوں کی تعلیم کو فروغ دینے میں مدد ملے گی۔

صنعتوں اور پیداوار کے وزیر خسرو بختیار نے کہا کہ مستحق خاندانوں کو رعایتی نرخوں پر اشیا خوردونوش کی فراہمی کےلئے احساس راشن سکیم شروع کی گئی ہے۔غربت کے خاتمے کے بارے میں معاون خصوصی ثانیہ نشتر نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ مستحق خاندانوں کی سہولت کےلئے احساس ون ونڈو کے دائرہ کار بڑھایا جائے۔

انہوں نے کہا کہ اب تک احساس تعلیمی وظائف کے تحت 60 لاکھ بچہ داخل ہو چکا ہے، ہر تین ماہ میں ایک ملین اسٹوڈنٹ داخل ہورہے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ احساس کی اب ایپ بھی آجائیگی ، احساس راشن رعایت کے تحت کریانہ مالک اور یوٹیلیٹی اسٹورز رعایت دیگا، لوگ اس پروگرام سے مستفید ہوں گے، جو کریانہ مالک اس سے مستفید ہونا چاہتے ہیں وہ اپنے آپ کو رجسٹرکرائیں ۔

ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے کہا کہ جو لوگ سروے سے رہ گئے ان کے لیے 500 رجسٹریشن سینٹرملک بھر میں کھول دیے گئے ہیں، یکم مارچ سے احساس کی 12 ہزار والی رقم 13 ہزار ہو جائیگی۔انہوں نے کہا کہ احساس کے دائرہ کار میں متعدد پروگرام ہیں، ان میں احساس نشوو نما، کفالت، احساس تحفظ، احساس راشن و دیگر ہیں، ہم نے ان تمام پروگرامزکو ایک جگہ سے دینے کیلئے ون ونڈو سینٹر بنایا، یہاں ایک چھت کے نیچے تمام احساس سہولیات موجود ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں