ملک میں لاوارث نظام چل رہا ہے، سراج الحق

پشاور,جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق نے کہا ہے کہ ملک میں لاوارث نظام چل رہا ہے،سمجھ نہیں آرہی کہ نظام کی بہتری کے لیے کونسا دروازہ کھٹکھٹایا جائے،، افغانستان میں خونریزی کا خاتمہ چاہتے ہیں، نیٹو فورسز کی افغانستان آمد کی وجہ سے پشتون قوم مسائل سے دوچار ہوئی، امریکہ اب واپس جارہا ہے، نقصانات کا معاوضہ کون ادا کرے گا؟۔پختون قومی جرگے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی نے کہا پاکستان ترقی کرے گا تو ہی ہر کوئی ترقی کرے گا، ملک میں لاوارث نظام چل رہا ہے اس لیے سمجھ نہیں آرہی کہ نظام کی بہتری کے لیے کونسا دروازہ کھٹکھٹایا جائے۔سراج الحق نے کہا کہ ملک کی بہتری کے لیے تمام سیاسی جماعتوں کو مل کر کردار ادا کرنا ہوگا، افغانستان میں خونریزی کا خاتمہ چاہتے ہیں، نیٹو فورسز کی افغانستان آمد کی وجہ سے پشتون قوم مسائل سے دوچار ہوئی ہے۔انہوں نے افغانستان سے امریکی فوج کے انخلا سے متعلق اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ جنگ سے پورا خطہ متاثر ہوا ہے، امریکہ اب واپس جارہا ہے، نقصانات کا معاوضہ کون ادا کرے گا؟، ہیروشیما اور ناگاساکی میں اتنا بارود استعمال نہیں ہوا جتنا پاک افغان سرحد کے دونوں جانب ہوا، ہمارے پودوں، پہاڑوں اور چشموں نے بارود جذب کیا ہے۔امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ سول بالادستی میں ہی ملک کی بقا ہے، حکومت خیبر پختونخوا کو اپنا حصہ نہیں دے رہی، ہم چاہتے کہ اس صوبے کے مسائل حل ہوں، افسوس کی بات ہے کہ پاکستان تحریک انصاف نے اصلی معنوں میں جرگے میں شرکت نہیں کی۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں