خضدار، اوستہ محمد میں مختلف واقعات میں 3 افراد قتل

خضدار، اوستہ محمد (این این آئی) خضدار میں گھریلو تنازع پر بھائی جاں بحق ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق خضدار زہری کے علاقے نور گامہ میں رات گئے گھریلو تنازعہ پر یار محمد پندرانی اور ان کے بیٹوں نے کلہاڑی کے وار کر کے جان محمد پندرانی کو قتل کردیا اور موقع سے فرار ہوگئے پولیس کو اطلاع ملتے ہی جائے و قوعہ پہنچ کر علا قے کو گھیرے میں لے کر ملز ما ن کی تلا ش شروع کر دی ۔ علاوہ ازیں اوستہ محمد صدرتھانہ حدود میں 2 افراد قتل 2 زخمی۔ نصیر آباد میں ڈویژن میں بکرا ذبح کرنا مشکل انسان قتل کرنا آسان ہو گیا ۔جتنی بھی وارداتیں ہوئیں ان میں کوئی قاتل نہیں پکڑا جاتا اب علاقہ کشمور کندھ کوٹ کی طرح نو گو ایریا بن گیا۔دشمنی کی آڑ میں ڈکیتی کی وارداتیں بھی شروع ہیںتفصیلات کے مطابق نصیر آباد ڈویژن میں قبائلی دشمنیاں کینسر کے مرض کی شکل اختیار کر لیا گزشتہ روز صدر تھانہ کے حدود گوٹھ لکھمیر عمرانی میں پانچ مسلح افراد نے گھر پر فائرنگ کی جس کے نتیجہ میں بھٹہ خان کھوسہ ۔مسما لعل خاتوں موقع پر قتل جبکہ مما موتاں اور مسما گل ناز شدید زخمی ہوئیں حملہ اور کھوسہ قبائل سے تعلق ہے حملہ آور معبینہ طور پر سائیں بخش اور حیدر کھوسہ تھےاور تین نا معلوم حملہ آور تھے جو فرار ہو گئے اطلاع ملتے ہی ڈی ایس پی خادم حسین مگسی اور اہس ایچ او موقع پر پہنچ کر زخمیوں اور لاشوں کو سیول اسپتال لائے زخمیوں کو مزید علاج کے لیے لاڑکانہ ریفر کر دیا لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کیا جوں ہی لاش گھرپہنچے تو کہرام مچ گیا ان قبائلی دشمنوں کے تصفیے کے لیے نواب سردار امیرسنجیدہ نہیں ہیں وہ نہیان چاہتے یہ قبائلی دشمنیاں ختم ہوں حکومت اس مسئلے ایکشن لیکر قبائیلی دشمنوں کا خاتمہ کروائیں تاکہ حالات کنٹرول ہوں ان قبائلی دشمنوں کی آڑ میں ڈکیتیاں اور چوریاں ہو رہی ہیں علاقہ نو گو ایریا بن گیا ہے کوئی گرفتاری بھی نہیں ہوتی ہے قاتل سر عام گھوم رہے ہیں ایک بکرے کو ذبح کر نا مشکل ہے انسانی قتل آسان ہو گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں