کوروناوائرس قدرتی نہیں، یہ انسان کی تخلیق کردہ ایک وائرس ہے، مولانا محمد خان شیرانی

لورالائی، جے یو آئی کے مرکزی رہنماء سابق چیئرمین اسلامی نظریاتی کونسل مولانا محمد خان شیرانی نے کہا ہے کہ کوروناوائرس قدرتی بیماری نہیں ہے بلکہ یہ انسان کی تخلیق کردہ ایک وائرس ہے جوکہ انسانیت کو نیست و نابود کر نا ہے انہوں نے کہا کہ یہ امریکہ اور چین کا اپس میں تنازعہ ہے جسمیں لقمہ اجل انسانوں کو بنا یا جارہا ہے انہوں نے کہا کہ یہ امریکہ اور دیگر عالمی ممالک کی ففتھ وارجنگ ہے۔یہ بات انہوں نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے کہا کہ ڈاکٹرز کے مطابق کورونا وائرس کوئی جان لیواء نہیں اور نہ ہی اسکی کوئی ویکسئین ابتک دریافت ہوئی انہوں نے کہا کہ علاج احتیاط بتایا جاتا ہے جسکے مطابق صابن سے ہاتھ دھونا ماسک کا استعمال کرنا یہ تو دونوں ہمارے نبی کی سنتیں ہیں اگرعلماء قوم کو موجوودہ صورتحال میں یہ بنا ئیں کہ ا گر ہر انسان مول والی پگڑی پہنے اور رومال کا استعمال کرے جیسا کہ ہمارے پشتون معاشرے میں عمومآٓ ہو تا ہے انہوں نے کہا کہ کورونا وائرس سے چین امریکہ اٹلی اسپین اور دیگر ممالک میں کوئی ہلاکتیں نہیں ہوئی ہیں یہ سب جھوٹ اور بے بنیاد پروپیگنڈہ ہے انہوں نے کہا کہ امریکہ کے ایک کیمرہ مین نے خود کہا کہ جن علاقوں میں کورونا وائرس سے متاثرہمریضوں کو رکھنے کا دعویٰ کیا گیا میں نے وہاں کا وزٹ کیا لیکن مجھے وہاں پر کوئی ایسا مریض دیکھنے کو نہیں ملا انہوں نے کہا کہ ایران سے بسوں میں آنے والے ایرانی زائرین کو دو دو ہزار روپے دیکر انکے منہ بند کئے جاتے ہیں کہ مرض سے ٹھیک ہونے کا نام نہ لو انہوں نے کہا کہ ہمارے قرنطینہ سینٹرزسے ہیروئنی لوگ بھاگ رہے ہیں انہوں نے کہا کہ روس کے صدر پیوٹن نے مغرب کو خبرداد کیا کہ وہ دنیا کی سات ارب آبادی کو کم کرنے کیلئے نت نئے سازشوں سے باز اجائے دنیا کے لوگوں کی زندگی کو آجیرن نہ بنائے او ر مغربی میڈیا جھوٹ کا سلسلہ بند کر ے انہوں نے کہا کہ سب کچھ نیو ورلڈ اارڈر کے نظام کو لانے کیلئے کیا جارہا ہے انہوں نے کہا کہ انسان توحید کو عملآٓ اپنی زندگی میں ظاہر اور باطن دونوں کواپنائے اور تقویٰ اختیار کرے انسان جو کچھ اپنے لیئے پسند کرتا ہے وہ دوسرے کیلئے بھی پسند کرے انہوں نے کہا کہ انسان کی بقاء عبادت میں ہے انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان لاک ڈاون اور کرفیوں کے خلاف ہیں لیکن ہمارے علماء بغیر کسی تحقیق کے لاک ڈاون کر کے مساجد اور دیگر کاروبار کو بند کررہے ہیں ایسا لگتا ہے کہ ہم ایک ادارے کے کہنے پر سب کچھ اور وزیر اعظم کے کہنے پر کچھ بھی عمل نہیں کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ روس میں عیسائیوں نے اپنے کلیساوں کو بند کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا کہ وباء سے نجات عبادت میں ہے بغاوت میں نہیں لیکن ہم اللہ کے گھر سے بھاگ رہے ہیں اور گھروں میں چھپ رہے ہیں ہماراملک لاک ڈاون اور کرفیوں کا کسی صورت متحمل نہیں ہو سکتا امت اپنے مساجد کو آباد رکھیں وزیر اعظم عمران خان کی یہ بات واقعی معقول ہے کہ ہمارے وسائل محدود ہیں اور ہم کروڑوں لوگوں کو لاک ڈاون اور کرفیوں میں راشن گھر گھر نہیں پہنچا سکتے لہذا عبادات بند نہیں ہونے چاہیئے اور اللہ کو راضی کرنے کیلئے سجدہ ریز ہوکر اپنے اعمال کی اصلاح کرنی چاہئے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply