کورونا، بلوچستان حکومت محض ٹوئٹر پر اعداد و شمار دے کر عوام کی زندگیوں سے کھیل رہی ہے، نذیر بلوچ

کوئٹہ،بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے مرکزی چیئرمین نزیر بلوچ نے کہا ہے کورنا جیسے عالمی سے عوام کو بچانے کے لئے مضبوط سیاسی قوت کے ذریعے سائنسی اصولوں کے اور WHOکے پروٹوکول کے مطابق فیصلوں کی ضرورت بلوچستان انتظامی طور پر WHOکے پروٹوکول پر عمل درآمد کرنے پر مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے ٹیسٹنگ کی محدود سہولیات کے وجہ سے بلوچستان کے دور دراز علاقوں میں کورنا وائرس کی ٹرینڈ کو کنفرم نہیں کی جاسکی عوام قربانی دے کر خود کو گھروں تک محدود کرے تاکہ اس وبا سے لوگوں کو بچایا جاسکے سرکاری سطح پر نہ احتیاطی تدابیر پر کوئی عمل درآمد ہوسکی نہ ہی لاچار غریب عوام کے امداد و مدد کے لئے واضح پالیسی بنائی جاسکی انہوں نے مزید کہا ہے دنیا اس خطرناک وبا کا مقابلہ سائنس و علم کے بنیاد پر کررہی یے لیکن بلوچستان حکومت نان ٹیکنیکل لوگوں جنکا میڈیکل سے کوئی واسطہ نہیں صرف ٹوئیٹر کے زریعے رائے عامہ کو محدود اعداد شمار کے زریعے عوام زندگیوں سے کھیل رہی ہے اس نااہلی میں برائے نام لاک ڈاون کا کوئی فائدہ نہیں لاک ڈاون بھی فوٹوں سیشن کی نذر ہوچکی حقیقی معنوں میں عوام کو محدود کرنے لئے کوئی اقدامات سامنے نہیں آسکے کورنا کے علاج و روک تھام کے لئے ماہر و سینئر ڈاکٹروں پر مشتمل کمیٹی بنا کر فیصلوں پر مضبوط سیاسی طاقت کے زریعے عمل درآمد کیا جائے۔اگر صورتحال کو سنجیدہ نہیں لایا گیا تو بلوچستان خطرناک انسانی عالمیے کا شکار بن سکتے ہے انہوں نے عوام سے بھرپور اپیل کی ہے خود کو گھروں تک محدود کرے اپنی مدد آپ کے اس بحران کا مقابلہ کرے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں