کوئٹہ شہر میں ایسی سڑکیں بھی ہیں جن پر دس پندرہ سال سے مرمت کی کسی نے زحمت بھی نہیں کی،گورنربلوچستان

کوئٹہ :گورنربلوچستان سید ظہور احمد آغا نے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ سٹی میں جگہ جگہ کچرے کے ڈھیر اور سڑکوں کی خستہ حالی پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کوئٹہ شہر میں ایسی سڑکیں بھی ہیں جن پر پچھلے دس پندرہ سال سے مرمت کی کسی نے زحمت بھی نہیں کی انہوں نے کہا کہ یہ ہماری اجتماعی بیحسی ہے کہ ہم اکیسویں صدی کے اس ترقی یافتہ دور میں بھی درختوں کو ری سائیکل کیے ہوئے پانی کا بندوبست نہ کر سکے. ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کے گورنر ہاوس میں ایڈمنسٹریٹر میٹروپولٹین کارپوریشن کوئٹہ حافظ شوکت علی سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا. اس موقع پر گورنر بلوچستان نے کہا کہ کوئٹہ میں بلڈنگ کوڈ اور پارکنگ کی صورتحال نے عام شہریوں کی زندگی کو اجیرن بنا رکھا ہے. ضروری ہے کہ ہر بڑے پلازہ اور شاپنگ سینٹر کے مالکان کو تعمیر سے پہلے کار پارکنگ کا بندوبست کرنے کا پابند بنایا جائے. گورنر بلوچستان نے اس بات پر زور دیا کہ صوبائی اسمبلی سے ایوب اسٹیڈیم تک اور شہباز ٹاون سے بینظیر بھٹو لیڈیز پارک تک گھومنے والے گاؤں اور بچھڑوں کا فوری طور پر تدارک کیا جائے. انہوں نے کہا کہ چونکہ کوئٹہ ریڈ زون میں واقع ہے اور کسی بھی ہنگامی صورتحال میں بڑے پیمانے پر جانی ومالی نقصانات کا خطرہ ہر وقت موجود ہے لہٰذا بلڈنگ کوڈ اور دیگر متعلقہ قوانین کی پاسداری لازم ہے. گورنر بلوچستان نے شہر کی صفائی ستھرائی اور ماحول کی بہتری کیلئے تمام متعلقہ محکموں کو اپنی ذمہ داریاں نبھانے, سٹریٹ لائٹس، ٹریفک سیگنلز بحال کرنے اور ملازمین کی حاضری کو یقینی بنانے کی خصوصی ہدایت کی

اپنا تبصرہ بھیجیں