رحمت اللہ چنال کو بازیاب نہیں کرایاجاسکا

خضدار(نمائندہ انتخاب)نوغے کے رہائشی ثناء اللہ چنال نے اپنی اطلاعی رپورٹ میں کہاہے کہ ہفتہ کے روز 15 جنوری 2022 کو میرے والد رحمت اللہ چنال کو معلوم و نامعلوم ملزمان نے سرف گاڑی میں اغوا کر کرکے اپنے ساتھ لے گئے ہیں۔اور کئی گھنٹے گزرجانے کے باوجود تاحال بازیاب نہیں کرایا جا سکا ہے ان کا کہنا تھا کہ نوغے اس وقت سوگ کے عالم میں ہے ہمارے خاندان کے لوگ المناک ٹریفک حادثے میں اجڑ گئے ہیں اور ہم اب تک اس سانحہ سے باہر نہیں نکلے ہیں کہ ایسے میں ملزمان کی بے رحمی و دیدہ دلیری دیکھئے کہ وہ ہمارے علاقے میں بلاخوف و خطر گھس آئے اور بلا روکاوٹ ہمارے گاؤں سے اسلحہ کے زور پر میرے والد کو اغوا کرکے لے گئے جو حکومتی رٹ کو چیلنج کرنے کے مترادف ہے۔ اس سلسلے میں حکومت بلوچستان قانون نافذ ادا کرنے والے اداروں سے اپیل کی ہے کہ میرے والد کو فوری طور پر بازیاب کرواکر ملوث ملزمان کو گرفتار کرکے انہیں قانون کے کٹھرے میں لیکر آئیں۔ والد کی عدم بازیابی پر ہم مجبور ہو کر سخت احتجاج اور روڈ بلاک کرنے پر مجبور ہونگے

اپنا تبصرہ بھیجیں