دیبالپور میں 16 سالہ نابینا طالبہ سے زیادتی محکمہ تعلیم کے 3 ملازمین معطل

لاہور (انتخاب نیوز) محکمہ سپیشل ایجوکیشن نے دیبالپور میں 16 سالہ نابینا طالبہ سے زیادتی پر محکمہ تعلیم کے 3 ملازمین کو معطل کر دیا۔تفصیلات کے مطابق اسپیشل ایجوکیشن سینٹر دیپالپور میں 8ویں جماعت کی نابینا طالبہ سے زیادتی میں ملوث تین ملازمین کو محکمہ اسپیشل ایجوکیشن نے معطل کر دیا۔ترجمان اسپیشل ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے مطابق ملزمان کو پیڈا ایکٹ کے تحت کارروائی کرتے ہوئے 90 دن کے لیے معطل کیا گیا، ملازمین میں میوزک ٹیچر محمد کامران خان، چوکیدار صفدر اور اٹینڈنٹ اللہ دتا شامل ہیں۔ڈائریکٹر جنرل اسپیشل ایجوکیشن کا کہنا ہے کہ واقعے میں ملوث ملزمان کے خلاف قانون کے مطابق محکمانہ کارروائی کی جا رہی ہے۔اس کیس میں ڈی پی او فرقان بلال کی ہدایت پر منگل کے روز 2 ملزمان کامران اور صفدر کو گرفتار کیا جا چکا ہے، جن سے تفتیش کی جا رہی ہے، جبکہ تھانہ سٹی دیپالپور میں لڑکی کے والد کی مدعیت میں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔مقدمے کے متن میں لکھا گیا ہے کہ ملزمان نابینا طالبہ کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دے کر خاموش رہنے کا کہتے رہے۔ متاثرہ نابینا طالبہ کے والد نے وزیر اعلی پنجاب سے نوٹس لینے کا بھی مطالبہ کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں