اصلاحاتی پالیسی کے تحت تنظیم کو فکری انداز میں آگے بڑھا رہے،چیئرمین بی ایس او

کوئٹہ،بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے مرکزی چیئرمین نزیر بلوچ نے کہا ہے بی ایس او کے 52 سالہ تاریخی بلوچ شہدا کے قربانیوں اور عظیم دوستوں کے جدوجہد کی وجہ ہے تنظیم کو موجودہ دور کے تقاضوں کے مطابق ہم اہنگ کرکے اصلاحاتی پالیسی کے تحت تنظیم کو فکری انداز میں آگے بڑھا رہے مشکلات کے بعد بی ایس او نے حالیہ دور میں تمام قومی ایشوز پر صف اول کا کردار ادا کیا موجودہ دور میں طلبا سیاست کو قدغن کا شکار بنانا بی ایس او کے راستے کو روکنے کے لئے کیا گیا جسکی بی ایس او نے کارکنوں نے تنظیمی و علمی طاقت سے مقابلہ کیا اور اس میں سرخ روح ہوئے انہوں نے مزید کہا ہے بی ایس او کے قومی کونسل سیشن کا انعقاد جہاں تنظیمی اداروں کے منتقلی و انہیں مضبوط کرنے کے لئے اہم ہے وہاں بی ایس او کا قومی کونسل سیشن عظیم قومی فکر کو مضبوط کرنے اور اسکی تجدید عہد کو قومی پلیٹ فارم ہے بی ایس او کے قومی کونسل سیشن کی کامیابی بلوچ سیاست میں سنگ میل کی حیثیت رکھتی آئندہ کونسل سیشن کا پرفکر قومی و شفاف انداز میں انعقاد و بی ایس او کو اندرونی تنظیمی طورپر مضبوط کرنے کے لئے اہم ہے قومی کونسل سیشن کا کامیاب انعقاد قومی و نظریاتی سیاست میں ایک نئی روح پھونک دیگی بی ایس او کے کارکنان قومی کونسل سیشن کے انعقاد کے لئے بھرپور محنت کرے تمام زونز کو تاکید کی جاتی ہے اپنے ممبر شپ ریکارڈ کارکردگی رپورٹ جلد از جلد مرکز کو ارسال کرے تاکہ قومی کونسل کے شفاف انعقاد کو یقینی بنایا جاسکے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں