حکومت اور سٹیٹ بنک معیشت سنبھالنے میں بری طرح ناکام ہوچکے ہیں،شہبازشریف

اسلام آباد،پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور قائد حزب اختلاف شہبازشریف نے روپے کی قدر میں ریکارڈ 3 فیصد کمی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت اور سٹیٹ بنک معیشت سنبھالنے میں بری طرح ناکام ہوچکے ہیں،حکومتی پالیسی کی وجہ سے پہلے سے آئے بحران میں غریب عوام پر معاشی بوجھ بڑھ جائے گا،حکومت کو سنجیدگی اور عقلمندی سے صحیح فیصلے کرنے ہوں گے، غلط وقت پہ غلط فیصلوں کے نتائج خدا نخوستہ تباہ کن ہو سکتے ہیں۔ایک بیان میں انہوں نے کہاکہ حکومت اور سٹیٹ بنک معیشت سنبھالنے میں بری طرح ناکام ہوچکے ہیں،حکومتی پالیسی کی وجہ سے پہلے سے آئے بحران میں غریب عوام پر معاشی بوجھ بڑھ جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ ایک ہفتے بعد ہی دوبارہ سود کی شرح میں کمی سٹیٹ بنک کی پالیسی کی ناکامی کا منہ بولتا ثبوت ہے،پہلے ہی اس غلط پالیسی کے تباہ کن اثرات سے خبردار کیا تھا۔ انہوں نے کہاکہ شرح سود کم سے کم 9فیصد تک کی جائے،شرح سود پہلے13.25 سے 12.5 اور پھر 12.5 سے 11 فیصد کی گئی۔ انہوں نے کہاکہ ثابت ہوا کہ سٹیٹ بنک کی طرف سے کی گئی دونوں مرتبہ کی کمی ناکافی تھی۔ انہوں نے کہاکہ اس اقدام سے جن ثمرات کا قوم سے وعدہ تھا، وہ برآمد نہیں ہوئے، الٹا تباہی ہوئی۔ انہوں نے کہاکہ خسارہ درآمد میں کمی اور تیل کی قیمت میں کمی کی وجہ سے تقریبا صفر ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہاٹ منی کے خطرے کی نشاندہی کی تھی،ہاٹ منی پر انحصار اور حکومت کی ناقص کارکردگی نے آگ پر تیل کا کام کیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ حکومت نے عوام کو ریلیف فراہم کرنا تھا لیکن وہ ان کے گلے میں معاشی پھندا ڈال رہی ہے۔ انہوں نے کہاکہ معیشت کی بربادی کورونا سے بڑی تباہی لائے گی۔ انہوں نے کہاکہ حکومت کو سنجیدگی اور عقلمندی سے صحیح فیصلے کرنے ہوں گے، غلط وقت پہ غلط فیصلوں کے نتائج خدا نخوستہ تباہ کن ہو سکتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ آئیں اللہ تعالی کے حضورصورتحال کی بہتری کیلئے گڑاگڑا کر دعائیں مانگیں۔

50% LikesVS
50% Dislikes

Leave a Reply