آئندہ چند ماہ میں سلیکٹڈ حکمرانوں کو عوام کی طاقت سے ہی رخصت کریں گے،مولانا عبدالواسع

کوئٹہ : جمعیت علما اسلام بلوچستان کے صوبائی امیر و رکن قومی اسمبلی مولانا عبدالواسع نے کہا ہے کہ موجودہ حکمرانوں کے خلاف لائحہ عمل طے ہو گئی ہے آئندہ چند ماہ میں سلیکٹڈ حکمرانوں کو عوام کی طاقت سے ہی رخصت کریں گے، کوئٹہ میں ڈاکٹروں کی ریلی میں لاٹھی چارج اور تشدد کی مذمت کرتے ہیں حکومت وقت کو چاہئے کہ وہ ڈاکٹروں پر تشدد کا راستہ ترک کرکے پرامن مذاکرات کا راستہ اختیار کریں، ڈاکٹرز مسیحا ہیں ان پر تشدد کرنا غیر جمہوری عمل ہے۔ اپنے جاری کردہ بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ عمران نیازی اور ان کی حکومت جلدرخصت ہونے والی ہے کیونکہ موجودہ حکومت آئی ایم ایف کو خوش کرنے کیلئے ملک کے خاص اداروں اور اسٹیٹ بینک کو دا پر لگانے کی کوشش کررہی ہے اور ہر دو ماہ بعد منی بجٹ لا کر عوام سے جینے کا حق چھین رہی ہے۔انہوں نے کہاکہ حکمران ہر چیز پر ٹیکس لا کر حکمران عوام کو ریلیف دینے کی بجائے آئی ایم ایف کو ریلیف دینے کی کوشش کررہے ہیں جس سے یہاں کے معاشی حالات پر منفی اثرات مرتب اور عوام خودکشیاں کرنے پر مجبور ہورہے ہیں۔ مولانا واسع نے کہا ہے کہ مولانا فضل الرحمن اور شہباز شریف کی ملاقات انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور اس ملاقات کے مستقبل میں اچھے اثرات مرتب ہوں گے۔ انہوں نے کوئٹہ میں ڈاکٹروں کی پرامن ریلی پر پولیس کی جانب سے لاٹھی چارج اور ان کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ حکومت ہوش کے ناخن لیکر ان کے جائز مطالبات کو تسلیم کریں اور ڈاکٹروں پر ہونے والے تشدد کے اصل محرکات کو عوام کے سامنے لایا جائے ڈاکٹروں ہمارے معاشرے کا ایک اہم حصہ ہے بلوچستان پہلے ہی مشکلات کا شکار ہے اور ڈاکٹروں کو بھی چاہئے کہ وہ ہڑتال کو ختم کرکے غریب عوام کی خدمت کریں کیونکہ ہمارے عوام کے پاس اتنے وسائل نہیں ہے کہ وہ پرائیویٹ ہسپتالوں میں جا کر علاج و معالجہ کریں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں