چین میں تیار کردہ جنگی جہاز طغل کی پاک بحریہ میں شمولیت

کراچی:پاک بحریہ کے لئے تعمیر کئے جانے والے چار 054 ایلفا کثیر الجہتی فریگیٹس میں سے پہلے جہاز پی این ایس طغرل اور 10 سی کنگ ہیلی کاپٹرز کی پاک بحریہ کے بیڑے میں شمولیت کی تقریب پاکستان نیوی ڈاکیارڈکراچی میں منعقد کی گئی۔ صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی اس موقع پر مہمان خصوصی تھے۔پاکستان نیوی ڈاکیارڈ آمد پر چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل محمد امجد خان نیازی نے مہمان خصوصی کا استقبال کیا۔ پاک بحریہ کے ایک چاق و چوبند دستے نے مہمان خصوصی کی آمد پر ان کو گارڈ آف آنر پیش کیا۔پاک بحریہ کے لئے چار 054 ایلفا فریگیٹس کی تعمیر کا معاہدہ پاکستان اورچین کے مابین جون 2018 میں طے پایا۔اس سلسلے کا پہلا جہاز پی این ایس طغرل اور قطر کی حکومت کی جانب سے تحفے میں دئیے گئے سی کنگ ہیلی کاپٹرز پیرکوپاک بحریہ کے بیڑے میں شامل کئے گئے ہیں۔اس موقع پرمہمان خصوصی ڈاکٹرعارف علوی نے اپنے خطاب میں جدید اور اعلیٰ صلاحیتوں کا حامل پاک بحریہ کا بیڑہ پوری لگن سے ملکی سمندری حدود کا دفاع اورحکومتی پالیسی کے مطابق امن و استحکام کے فروغ میں کردار ادا کرتا رہے گا۔صدر مملکت نے موجودہ چیلنجنگ سیکیورٹی ماحول میں بحری دفاع کے لئے جدید صلاحیتوں کے حامل سطح آب، زیر آب اور فضائی پلیٹ فارمز کی ضرورت پر زور دیا۔چین میں تیار جنگی بحری جہاز پی این ایس طغرل پاکستان نیوی کیلئے تعمیر 4 جہازوں میں سے پہلا جہاز ہے۔عارف علوی نے کہا کہ منصوبے سے پاکستان میں جہاز کی صنعت کو فروغ ملے گا۔اپنے خطبہ استقبالیہ میں چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل محمد امجد خان نیازی نے کہا کہ پی این ایس طغرل اور سی کنگ ہیلی کاپٹرز کی شمولیت سے پاک بحریہ کی ملکی سمندری حدود اور میری ٹائم مفادات کے تحفظ کی صلاحیتوں میں اضافہ ہو گا۔انہوں نے مختلف اقدامات کے ذریعے خطے میں امن و استحکام کے فروغ میں پاک بحریہ کے کردار کو اجاگرکیا۔ بعد ازاں مہمان خصوصی نے پی این ایس طغرل کی کمانڈ اسکرول اورائیر کرافٹ کے کاغذات کمانڈر پاکستان فلیٹ کے حوالے کئے جس کے بعد دعائے خیر کی گئی۔تقریب میں قطر اور چین کے سفارتی حکام، گورنر سندھ پاک بحریہ اور دیگر افواج کے سینئرحاضر سروس و ریٹائرڈ افسران بھی شریک تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں