جج ویڈیو اسکینڈل: شاہد خاقان، احسن اقبال، خواجہ آصف ایف آئی اے میں طلب

اسلام آباد:وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے جج ویڈیو اسکینڈل کیس میں بیان ریکارڈ کروانے کے لیے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی سمیت مسلم لیگ (ن) کے 3 رہنماؤں کو آئندہ ہفتے طلب کرلیا۔ذرائع نے بتایا کہ سابق وزیر اعظم کے علاوہ ایف آئی اے کے انسداد دہشت گردی ونگ نے مسلم لیگ (ن) کے سیکریٹری جنرل احسن اقبال اور قومی اسمبلی میں پارٹی کے پارلیمانی لیڈر خواجہ آصف کے بیانات ریکارڈ کرنے کے لیے انہیں 9 اور 10 مارچ کو طلب کیا ہے۔رپورٹ کے مطابق اس سلسلے میں شاہد خاقان عباسی کو9 مارچ کو اسلام آباد میں ایف آئی اے کے دفتر جانا ہوگا جبکہ مسلم لیگ (ن) کے دیگر 2 رہنماؤں کو 10 مارچ کو پیش ہونے کے نوٹسز ارسال کیے گئے۔یہ تینوں رہنما مسلم لیگ (ن) کے ماڈل ٹاؤن سیکریٹریٹ میں پارٹی کی نائب صدر مریم نواز کی 6 جولائی کو کی گئی اس پریس کانفرنس میں موجود تھے جس میں انہوں نے ’خفیہ طور پر ریکارڈ کی گئی‘ ویڈیو چلائی تھی۔مذکورہ ویڈیو میں احتساب عدالت کے جج مبینہ طور پر یہ کہتے سنے گئے تھے کہ انہیں العزیزیہ ریفرنس کیس میں سابق وزیراعظم نواز شریف کو سزا دینے کے لیے بلیک میل کیا گیا۔مریم نواز نے دعویٰ کیا تھا کہ یہ ویڈیو ’مسلم لیگ(ن) کے ایک ہمدرد‘ نے ریکارڈ کی ہے۔خیال رہے کہ شاہد خاقان عباسی اور احسن اقبال اپنے جماعت کی تنظیم نو کے معاملات کی وجہ سے 2 روزہ دورے پر کراچی آئے تھے۔قبل ازیں مسلم لیگ (ن) کے سینیٹر پرویز رشید، ڈپٹی سیکریٹری جنرل عطا تارڑ اور عظمیٰ بخاری ایف آئی اے کے انسداد دہشت گرد ونگ کے سربراہ بابر بخت کی سربراہی میں 3 رکنی ٹیم کے سامنے اپنا بیان ریکارڈ کرواچکے ہیں جو جج کی جانب ویڈیو میں رد وبدل شکایت کی تفتیش کررہی ہے۔گزشتہ برس دسمبر میں لاہور میں ایف ا?ئی اے کی ٹیم کے سامنے پیش ہونے کے بعد سینیٹر پرویز رشید نے کہا تھا کہ انہوں نے تفتیش کاروں سے کہا ہے کہ احتساب عدالت کے سابق جج ارشد ملک کی ویڈیو کا فرانزک ا?ڈٹ کروائیں جس میں انہوں نے دباؤ میں ا?کر سابق وزیر اعظم نواز شریف کو العزیزیہ ملز ریفرنس میں سزا سنانے کا اعتراف کیا تھا۔انہوں نے کہا تھا کہ مسلم لیگ (ن) عدالت میں ثبوت پیش کرنے پر بھی یقین رکھتی ہے تاہم پارٹی رہنماؤں نے اپنے قائد کی بے گناہی کے بارے میں عوام کو ا?گاہ کرنے کے لیے پریس کانفرنس کی تھی۔یاد رہے کہ 6 جولائی کو سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز پریس کانفرنس کے دوران العزیزیہ اسٹیل ملز کیس کا فیصلہ سنانے والے جج ارشد ملک کی مبینہ خفیہ ویڈیو سامنے لائی تھیں۔لیگی نائب صدر نے جو ویڈیو چلائی تھی اس میں مبینہ طور پر جج ارشد ملک، مسلم لیگ (ن) کے کارکن ناصر بٹ سے ملاقات کے دوران نواز شریف کے خلاف نیب ریفرنس سے متعلق گفتگو کر رہے تھے۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں