470 طیاروں کا سودا، بھارتی فضائی کمپنی ایئربس سے 250 طیارے خریدنے پر رضامند

نئی دہلی :بھارت کی فضائی کمپنی ایئرانڈیا نے ایئربس سے 250 جیٹ طیارے خریدکرنے پررضامندی ظاہرکی ہے۔ یہ سودا 470 طیاروں کی خریداری کے معاہدے کا حصہ ہے۔ائیرانڈیا اپنے نئے مالکان ٹاٹاگروپ کی سرکردگی میں تجدیدوترقی کے نئے دور سے گزررہی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق ٹاٹا کے چیئرمین این چندرشیکھرن نے کہا کہ اس آرڈر میں 210 تنگ باڈی طیارے اور 40 کھلے حجم والے طیارے شامل ہیں۔ان کا استعمال ایئر انڈیا دنیا بھرمیں انتہائی لمبے راستوں پرپروازوں کے لیے کرے گی۔اس معاہدے میں ایئربس کی حریف فرم بوئنگ سے 220 طیاروں کا آرڈر بھی شامل ہوگا۔چندرشیکھرن نے ورچوئل پریس بریفنگ میں کہا کہ ہم ایک عالمی معیارکی فضائی کمپنی بننے کے لیے پرعزم ہیں۔سب سے اہم چیزوں میں سے ایک جدید فضائی بیڑا ہے جوموثر ہواور تمام راستوں کے لیے کارکردگی کا مظاہرہ کرسکتا ہو۔اس آن لائن تقریب میں بھارتی وزیراعظم نریندر مودی اور فرانسیسی صدرعمانوایل ماکروں نے بھی شرکت کی، جو بھارت کی سابق پرچم بردار فضائی کمپنی کے ساتھ معاہدے کی سیاسی اور معاشی اہمیت کا اشارہ ہے۔یہ اہم معاہدہ بھارت اور فرانس کے درمیان گہرے تعلقات کا بھی عکاس ہے اور اس کے ساتھ ساتھ بھارت میں شہری ہوا بازی کے شعبے کی کامیابیوں اور امنگوں کو ظاہر کرتا ہے۔شہری ہوابازی کی صنعت کے ذرائع کا کہنا تھا کہ بھارت نے باربارایئربس کے لیے لابنگ کی ہے کہ وہ ملک میں ایک حتمی اسمبلی لائن قائم کرے جو شمالی چین کے پلانٹ سے مماثلت رکھتی ہو، لیکن طیارہ ساز کمپنی مالی اور صنعتی بنیادوں پراس تجویزکو مسترد کرتی رہی ہے۔تاہم توقع ہے کہ ایوی ایشن معاہدے میں دیگرصنعتی سمجھوتے بھی شامل ہوں گے اورصدرماکروں نے وعدہ کیا ہے کہ فرانس بھارت کے ساتھ مل کرطیاروں کے علاوہ بھی دوطرفہ تعاون پرکام کرے گا۔انھوں نے یہ بھی کہا کہ فرانس بھارت کو جدید اورمثر ترین ٹکنالوجی مہیا کرنے کے لیے پرعزم ہے اورکروناوائرس کی وباکے خاتمے سے دونوں ممالک کے درمیان مزید تبادلے ہونے چاہییں۔توقع کی جارہی ہے کہ ایئرانڈیا کا آرڈرایک دہائی قبل 460 ایئربس اور بوئنگ طیاروں کے لیے امریکی فضائی کمپنیوں کے مشترکہ معاہدے کے مقابلے میں سرفہرست ہوگا۔برطانوی خبررساں ایجنسی رائٹرز نے دسمبر میں اطلاع دی تھی کہ ایئرانڈیا 500 کے قریب طیاروں کی خریداری کے معاہدے کے لیے بات چیت کررہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں