بلوچستان میں قبائلی رنجشوں کو ختم کرنے کے لئے سب کو جدوجہد کرنا ہوگی،سردار یار محمد رند

کوئٹہؔچیف آف بیرک نواب مسعود جان شاہوانی اور ان کے فرزند نوابزادہ میر شاہ دین خان شاہوانی کا صوبائی وزیر تعلیم سردار یار محمد رند سے ان کے رہائش گاہ میں ملاقات، ملاقات میں دنوں رہنماوں نے صوبائی و سیاسی قبائلی علاقائی امور پر تبادلہ خیال کیا، اس موقع پر نواب مسعود جان شاہوانی نے کوروناوائرس کے روک تھام کیلئے صوبائی حکومت کی جانب سے اٹھائیگئے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت روز اول سے وبائی مرض کیلئے جو اقدامات اٹھا رہے ہیں وہ قابل تحسین ہے اس کے علاوہ انہوں نے امید ظاہر کی ہے کہ سردار یار محمد رند کے وزارت میں بلوچستان میں تعلیم کے بہتر اقدامات اٹھائے جائینگے، تاکہ ہمارے بچے تعلیم کے زیور سے آراستہ ہوسکے، اس موقع پر سردار یار محمد رند نے کہا کہ صوبے کے تمام علاقوں کے بچوں کے مستقبل پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائیگا تعلیمی اداروں کی بروقت بندش سے صوبے کو بڑی تباہی سے بچالیا اگر تعلیمی ادارے بند نہ ہوتے تو آج صورتحال مختلف ہوتی عالمی وباءکرونا وائرس کے قابو ہوتے ہی تعلیمی اداروں کے کھولنے کا فیصلہ کیا جائے گاانہوں نے کہا کہ بلوچستان کی آنے والی نسلوں کو بہترین تعلیمی سہولیات کی فراہمی کیلیے کوئی کسر نہیں چھوڑنگے، بلوچستان میں قبائلی رنجشوں کو ختم کرنے کے لئے سب کو جدوجہد کرنا ہوگا،قبائلی مسائل کی وجہ سے بلوچستان ترقی نہیں کر پا رہا ہے بلوچستان کے ہر ضلع کو تعلیم یافتہ بنانے میں ہر شخص کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا، تعلیم سے ہی معاشرے میں تبدیلی آہ سکتی ہے تعلیم کے شعبے کو مزید بہتر بنانے کے لئے سخت فیصلے کرنا ہوں گے،

اپنا تبصرہ بھیجیں