کوئٹہ،وزیراعلیٰ بلوچستان کی مختلف میڈیکل کالجز کے طلباء کے وفدسے ملاقات،مسئلہ کا حل نکالنے کی ہدایت

کوئٹہ (انتخاب نیوز)وزیراعلء بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو سے صوبے کے مختلف میڈیکل کالجز کے احتجاج کرنے والے طلبا ء کے وفد نے ملاقات کی صوبائی وزیر صحت سید احسان شاہ اور سیکریٹری صحت نورالحق بلوچ بھی اس موقع پر موجود تھے طلبا کی جانب سے وزیراعلیٰ کو آگاہ کیا گیا کہ پاکستان میڈیکل کونسل نے تربت خضدار اور لورالائی میڈیکل کالجز کے زیر تعلیم طلباء سے دوبارہ سے ٹیسٹ لینے کی شرط عائد کردی ہے جسکی نہ تو پی ایم سی کے قواعد میں کوئی گنجائیش ہے اور نہ کوئی قانون اسکی اجازت دیتا ہے اس شرط کے باعث طلباء میں بے چینی پائی جاتی ہے اور وہ گزشتہ ایک ماہ سے احتجاج پر ہیں اس موقع پر سیکریٹری صحت نے مسل? کے حوالے سے تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ پی ایم سی نے بلوچستان کے تینوں نئے میڈیکل کالجز کو تسلیم کیا ہے جو کہ طویل عرصہ سے تعطل کا شکار تھا اور یہ موجودہ حکومت کی کامیابی ہے کہ اتنی بڑی پیش رفت ہوئی ہے انہوں نے طلباء کے اس خدشہ کو بے بنیاد قرار دیا کہ ٹیسٹ میں ناکامی کی صورت میں انکی سیٹ واپس لے لی جائیگی اور یقین دلایا کہ زیر تعلیم طلباء اپنی تعلیم ہر صورت مکمل کرینگے اس موقع پر بات چیت کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ اگر اس معاملے میں کوئی قصور وار ہے تو وہ سابقہ حکومتیں ہیں طلباء کا کوئی قصور نہیں ہے انہوں نے سیکریٹری صحت کو مسلۂ کا حل نکالنے کی ہدایت کی وزیراعلیٰ نے واضع طور پر کہا کہ طلباء کا مستقبل کسی طور پر ضائع نہیں ہونے دیا جائیگا طلباء ہمارا مستقبل ہیں اور ہم اپنے مستقبل کو کسی طور نقصان نہیں پہنچنے دیں گے انہوں نے کہا کہ ہمیں ویسے بھی ڈاکٹروں کی ضرورت ہے طلباء محنت کر کے اس مقام تک پہنچے ہیں ہم طلباء کا کیس لڑیں گے انہوں نے کہا کہ طلباء یکسوئی کے ساتھ اپنی پڑھائی پر توجہ دیں انکا کیس حکومت خود لڑے گی طلباء نے انکا مسئلہ سننے اور معاونت کی یقین دہانی پر وزیراعلء کا شکریہ ادا کیا

اپنا تبصرہ بھیجیں