کرونا 115 ممالک میں پھیل گیا، دنیا بھر میں چار ہزار سے زائد ہلاکتیں

واشنگٹن:کرونا 115 ممالک میں پھیل گیا، دنیا بھر میں چار ہزار سے زائد افراد ہلاک ہو گئے، فرانسیسی وزیر ثقافت اور پیرس ائیرپورٹ چیف میں بھی وائرس کی تصدیق ہو گئی۔ ایران میں 237 اموات جبکہ سعودی عرب میں مزید چار کیسز سامنے آ گئے، اٹلی میں مکمل لاک ڈاؤن ہے۔ ادھر امریکی صدر سے قریبی رابطہ رکھنے والے دو کانگریس ارکان میں کرونا کا شبہ ہے۔دنیا کے 115ممالک کرونا کی لپیٹ میں آگئے۔ چین میں سترہ ہلاکتوں کے بعد تین ہزار ایک سو چھتیس افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ صدر شی جن پنگ نے ووہان کا دورہ کیا۔ چین کے بعد اٹلی کرونا سے سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے جہاں ایک روز میں 97 افراد ہلاک ہو گئے۔اٹلی میں کرونا سے ہلاکتوں کی تعداد 463 ہو گئی۔ پورے ملک میں لاک ڈاؤن کر دیا گیا، کروڑوں افراد کی نقل وحرکت پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ مختلف جیلوں میں ہنگاموں کے دوران 6 افراد ہلاک ہو گئے، قیدیوں کے اہل خانہ کی پولیس کے ساتھ جھڑپیں بھی ہوئیں۔کرونا سے ایران میں 237 افراد ہلاک، فرانس اور اسپین میں تیس تیس، جاپان میں سولہ، امریکا میں 27 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ فرانسیسی وزیرثقافت اورپیرس ائیرپورٹ چیف میں بھی وائرس کی تصدیق ہو گئی۔ادھر امریکی صدر ٹرمپ کے 2 قریبی ساتھیوں کا کرونا وائرس کا شکار ہونے کا شبہ ظاہر کیا گیا ہے، وائٹ ہاؤس کے نامزد چیف تین دن قبل ٹرمپ سے بھی ہاتھ ملا چکے ہیں۔بتایا گیا ہے کہ امریکا میں صدر ٹرمپ سے قریبی رابطہ رکھنے والے کانگریس کے دو ارکان میں کرونا کا شبہ ہے، دونوں ارکان نے خود کو الگ کر لیا۔ خبر ایجنسی کے مطابق ری پبلکن رکن ڈوگ کولنز نے ٹرمپ سے ہاتھ ملایا تھا جبکہ میٹ گیٹز نے ٹرمپ کے ساتھ ایئرفورس ون میں سفر کیا تھا۔امریکی نائب صدر مائیک پنس نے کہا ہے کہ انہیں نہیں معلوم کہ صدر ٹرمپ کا کرونا وائرس کا ٹیسٹ ہوا یا نہیں، وائٹ ہاوس کے ڈاکٹر سے معلومات لے کر جواب دوں گا۔

50% LikesVS
50% Dislikes

اپنا تبصرہ بھیجیں