بلوچستان تعلیمی لحاظ سے پسماندہ صوبہ ہے‘شفیق مینگل

خضدار(نمائندہ انتخاب)میر حاجی نیک محمد مینگل ریزیڈیشنل سکول وڈھ میں سالانہ تقریب کا انعقاد کیا گیا۔ تقریب کے مہمان خاص جھالاوان عوامی پینل کے سربراہ میر شفیق الرحمن مینگل تھے اعزازی مہمانوں میں ڈاریکٹر ریڈیو اسٹیشن خضدار سلطان احمد شاہوانی،سردار مراد خان شیخ، سابق پرنسپل بی آر سی محمد عالم جتک،پرنسپل ڈگری کالج نال پروفیسر کرم خان،صحافی مولوی صدیق مینگل ادیب دانشور اور براہوئی اکیڈمی کے چیئرمین محمد عالم براہوئی،پرنسپل پاک اسلامک پبلک اسکول خضدار خلیل احمد رودینی،ڈسٹرکٹ ایجوکیشن افیسر زکریا شاہوانی،پرنسپل ھائی اسکول وڈھ شمس مینگل،داود بلوچ صاحب،پرنسپل حاجی نیک محمد ریزڈیشنل اسکول عاطف رانا صاحب ودیگر تھے.تقریب میں والدین اساتزہ کرام اور طلباء سمیت دیگر مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے لوگ شامل تھے۔تقریب میں میر حاجی نیک محمد مینگل ریزیڈیشنل سکول کے سالانہ امتحان میں پوزیشن ہولڈر طلباء میں شیلڈ اور انعامات بھی تقسیم ہوئے۔ اور خصوصاً سکول کے سالانہ امتحان میں پوزیشن لینے والے طلباء میں خاص انعامات تقسیم ہوئے۔تقریب سے اساتزہ کرام و مہمانان نے طلباء کی خوب حوصلہ افزائی کرتے ہوئے ان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔اس موقع پر جہالاوان عوامی پینل کے سربراہ میر شفیق الرحمن مینگل نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سکول کے بچے ہمارے مستقبل کے روشن چراغ ہیں انہیں سے مستقبل روشن ہونے کا بڑی امکان ہے، بچوں کی جوش جذبہ ولولہ اور اساتذہ کرام کی محنت لگن ایک خوشحال مستقبل کی نوید سناتی ہے کہ آنے والا سورج علم شعور تعلیم کی نوید لیکر طلوع ہوگا۔ انہوں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان تعلیمی لحاظ سے پسماندہ صوبہ ہے، خاص کر تحصیل وڈھ محرومیوں میں سریفہرست ہے۔ تحصیل وڈھ کو دانستہ طور پر تعلیمی میدان میں نظرانداز رکھا گیا ہے، قوم تعلیم حاصل کرکے ہی ان تعلیم دشمن عناصر سے انتقام لے سکتا ہے۔ علم شعور کی فقدان کی وجہ سے صوبہ خاص کر تحصیل وڈھ محرومیوں کا شکار ہے علم کی شمع سے ہی محرومیوں کا خاتمہ ممکن ہے۔ علم ہی وہ ہتھیار ہے جس کے ذریعے سے ہم فتحیاب ہوسکتے ہیں اور اپنے دشمن سے بہتر انتقام لے سکتے ہیں۔قوم اپنی تمام تر توجہ تعلیم پر مبذول کرے تاکہ ایک پرامن شعوریافتہ اور تعلیم یافتہ معاشرہ تشکیل پائے۔ تعلیمی ادارے ہمارے شعور کے مینار ہیں یہاں تعلیم حاصل کرنے والے بچے ہمارے اثاثے ہیں مستقبل انہیں بچوں سے وابسطہ ہے یہ بچے آج تعلیم حاصل کرکے کل ہمارے ملک کے ہیرو بن سکتے ہیں انہیں سے ڈاکٹر وکیل پروفیسر انجینیئر وغیرہ بننے کی اُمید ہے، یہی سب کل کو ہمارے ملک کے نام روشن کرینگے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں